Daily E- Urdu Akhbarروزنامہ اردو اخبارات

ناول (میگزین)

  • نتیش کمار نے آٹھویں بار بہار کے وزیر اعلیٰ کا حلف لیا، تیجسوی یادو نے بھی حلف اٹھا لیا، نتیش کمار نے حلف اٹھانے کے بعد نریندر مودی کو نشانہ بنایا

    پٹنہ : نتیش کمار نے بہار کے وزیر اعلیٰ کے طور پر حلف اٹھا لیا ہے۔ ان کے ساتھ تیجسوی یادو نے بھی حلف لیا ہے۔ بہار کے گورنر پھگو چوہان نے راج بھون میں منعقدہ ایک پروگرام میں انہیں عہدے اور رازداری کا حلف دلایا۔ایک دن پہلے نتیش کمار نے این ڈی اے اتحاد سے تعلقات توڑتے ہوئے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے راشٹریہ جنتا دل کے ساتھ مل کر نئی حکومت بنانے کا دعویٰ پیش کیا تھا۔نتیش کمار نے 165 ایم ایل ایز کی حمایت کا دعویٰ کیا ہے۔ سال 2020 کے اسمبلی انتخابات میں نتیش کمار نے بی جے پی کے ساتھ مقابلہ کیا۔ لیکن گزشتہ دنوں دونوں جماعتوں کے درمیان اختلافات کھل کر سامنے آنے لگے۔سابق مرکزی وزیر آر سی پی سنگھ کو لے کر تنازعہ بڑھ گیا ہے۔ نتیش کمار نے منگل کو جنتا دل یونائیٹڈ کے ایم ایل ایز اور ایم پیز کی میٹنگ بلائی تھی، جس میں بی جے پی سے الگ ہونے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

    https://twitter.com/ani_digital/status/1557289819763384321?s=20&t=Ci0elOuIB364jxrNAnuC-A

    انہوں نے 3 مارچ 2000 کو پہلی بار وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف اٹھایا۔ اس وقت ان کے پاس اکثریت نہیں تھی اور سات دن کے بعد انہیں اقتدار چھوڑنا پڑا۔ 2005 میں نتیش کمار نے دوسری بار وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف لیا۔ اس بار انہوں نے بی جے پی کی مدد سے حکومت بنائی۔حلف لینے کے بعد نتیش کمار نے نامہ نگاروں سے کہا کہ گزشتہ دو ماہ سے حالات ٹھیک نہیں ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ وہ 2020 میں وزیراعلیٰ نہیں بننا چاہتے۔ لیکن ان پر دباؤ ڈال کر وزیراعلیٰ بنایا گیا۔

    سابق مرکزی وزیر آر سی پی سنگھ کا نام لیے بغیر انہوں نے کہا کہ جو لوگ پارٹی کی طرف سے وہاں گئے تھے وہ کہیں اور چلے گئے ہیں۔ وزیر اعظم کے عہدے کے دعوے کے بارے میں نتیش کمار نے کہا- میرا کوئی دعویٰ نہیں ہے۔ ہم کسی چیز کا دعویٰ نہیں کرتے۔ لیکن بی جے پی کا نام لیے بغیر انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ اپوزیشن ختم ہو جائے گی۔ لیکن اب وہ بھی مخالفت میں آ گئے ہیں۔ چلو دیکھتے ہیں.

  • نتیش کمار آج دوپہر 2 بجے آٹھویں بار وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف لیں گے ، تیجسوی نائب وزیر اعلیٰ ہوں گے

    بہار میں نتیش کمار نے منگل کے روز گورنر کو "نیشنل ڈیموکریٹک الائنس (این ڈی اے) کے وزیر اعلیٰ” کی حیثیت سے اپنا استعفیٰ پیش کر دیا ہے ۔ اب بدھ کی دوپہر 2 بجے نتیش کمار عظیم اتحاد کی حمایت سے وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف لیں گے۔نتیش کمار کی حکومت کو کانگریس، آر جے ڈی اور بائیں بازو کی جماعتوں کی حمایت حاصل ہوگی۔ اس سے قبل نتیش کمار کو قانون ساز پارٹی کا لیڈر منتخب کیا گیا تھا اور گورنر کے سامنے حکومت بنانے کا دعویٰ پیش کیا تھا۔ حلف برداری کا وقت راج بھون سے شام 4 بجے مقرر کیا گیا ہے۔جنتا دل یونائیٹڈ لیڈر نتیش کمار بدھ کو آٹھویں بار وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف لیں گے۔ اس سے پہلے وہ سات مرتبہ اس عہدے کا حلف اٹھا چکے ہیں۔ 2005 سے نتیش چند دنوں کے علاوہ مسلسل بہار کے وزیر اعلیٰ رہے ہیں۔

    نتیش کمار نے کہا کہ این ڈی اے سے علیحدگی کا فیصلہ ان کا اکیلا نہیں ہے۔ ان کی پارٹی کے دیگر لوگ بھی چاہتے تھے کہ وہ ایک بار پھر بی جے پی اور این ڈی اے سے نکل کر ریاست کی ترقی کے لیے کام کریں۔نتیش کمار نے مزید کہا کہ آج انہیں ریاست کی سات بڑی پارٹیوں کی حمایت حاصل ہے۔ یہ تمام پارٹیاں چاہتی تھیں کہ جے ڈی یو بی جے پی چھوڑ کر نئی حکومت بنائے۔بہار کے وزیراعلیٰ کے عہدے سے نتیش کمار کے استعفیٰ کے بعد بی جے پی کا پہلا ردعمل سامنے آیا ہے۔

  • بہار سیاسی بحران LIVE : نتیش کمار نے دیا وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ، تیجسوی یادو سے ملاقات

    بہار میں بی جے پی اور جے ڈی یو کا اتحاد ٹوٹ گیا ہے۔ سی ایم نتیش نے اپنا استعفیٰ گورنر فاگو چوہان کو سونپ دیا ہے۔ استعفیٰ دینے کے بعد نتیش کمار خود رابڑی دیوی کی رہائش گاہ پہنچے۔ اس سے پہلے آج کی جے ڈی یو کی میٹنگ میں پارٹی کے سبھی ایم ایل اے اور ایم پی نے سی ایم نتیش کمار کے فیصلے کی حمایت کی اور کہا کہ وہ ان کے ساتھ ہیں۔ بہار میں جاری سیاسی ہلچل سے متعلق لمحہ بہ لمحہ اپ ڈیٹس کے لیے ہم سے جڑے رہیں۔

    نتیش کمار کو عظیم اتحاد کا لیڈر منتخب کیا گیا۔

    ذرائع کے مطابق نتیش کمار کو حکومت سازی کا دعویٰ پیش کرنے سے پہلے عظیم اتحاد کے لیڈر کے طور پر منتخب کیا گیا ہے۔ اس عظیم اتحاد میں جے ڈی یو کے علاوہ آر جے ڈی اور کانگریس شامل ہیں۔

    بی جے پی نے کہا : نتیش نے بہار کے لوگوں کو دھوکہ دیا۔ہار بی جے پی کے سربراہ سنجے جیسوال نے کہا- نتیش کمار نے عوام کی رائے سے کھیلا۔ نتیش نے بہار کے لوگوں کو دھوکہ دیا ہے۔تو وہیں نتیش کمار اور تیجسوی یادو ایک ساتھ رابڑی دیوی کے گھر سے باہر آئے۔

    https://twitter.com/ANI/status/1556958937076756484?s=20&t=TMCCeafCJmX5l0twh_uhyQ

    نتیش کمار رابڑی دیوی کی رہائش گاہ پہنچے : نتیش کمار رابڑی دیوی کی رہائش گاہ پہنچے۔ تیجسوی یادو سمیت کئی رہنما یہاں موجود تھے۔

    https://twitter.com/ANI/status/1556953855174197248?s=20&t=7gDOVNs5kCmy4SywnUZWZA
  • جنتا دل یو اور آر جے ڈی کی اہم میٹنگ آج، بہار کی سیاست میں تبدیلی کے آثار

    پٹنہ : 08 اگست ۔ ریاست میں سیاسی اتھل پتھل کے بیچ راجدھانی کا سیاسی پارہ عروج پر ہے ۔ در اصل سابق مرکزی وزیر آری پی سنگھ کے استعفیٰ کے بعد بہار کی سیاست میں قیاس آرائیوں کا دور شروع ہو گیا ہے کہ کیا بی جے پی جے ڈی یو کا اتحاد برقرار رہ سکتا ہے یا نہیں ۔

    در یں اثنا بہار اسمبلی میں اپوزیشن آر جے ڈی نے کہا کہ اگر وزیر اعلی نتیش کمار بی جے پی کے ساتھ رشتہ توڑتے ہیں تو انہیں اور ان کی پارٹی کو گلے لگانے کیلئے تیار ہیں ، پارٹی کے قومی نائب صدر شیوانند تیواری نے آج پٹنہ میں نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ منگل کو دونوں پارٹیوں کے ذریعہ ممبران پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی کی میٹنگ اس بات کا واضح اشارہ کرتی ہے کہ سیاست میں کچھ بھی ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ سیاسی واقعات کے بارے میں ذاتی طور سے واقف نہیں ہیں لیکن اس بات کو نظر انداز نہیں کر سکتے ہیں کہ دونوں پارٹیوں نے میٹنگ طلب کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر نتیش کمار این ڈی اے کو چھوڑنے کا فیصلہ کرتے ہیں تو ہمارے پاس گلے لگنے کے علاوہ اور کوئی متبادل نہیں ہیں ۔ آر جے ڈی بی جے پی، جنتا دل یو اور آر جے ڈی سے لڑنے کیلئے پرعزم ہیں ۔ اگر وزیر اعلی اس لڑائی میں شامل ہونے کا فیصلہ کرتے ہیں تو ہمیں اپنے ساتھ لینا ہی ہوگا ۔ وہیں آر جے ڈی کے رکن راجیہ سجا منوج جھا نے بہار میں سیاسی بحران پر کہا کہ جو گزشتہ 48 گھنٹے میں ہوا ہے اس پر تیجسوی نظر بنائے ہوئے ہیں ۔ بہار میں اقتدار میں تبدیلی ضروری ہے ۔ اس بیچ آج منگل کو صبح 11 بجے جے ڈی یو نے اپنے سبھی ممبران پارلیمنٹ کی میٹنگ سی ایم ہاؤس میں بلائی ہے ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button