اہم خبریںطب و صحت

دانتوں میں دکھائی دینے والے کالے کیڑوں سے چھٹکارا دلاتا ہے یہ گھر پر بنا ہربل پاؤڈر، بچوں اور بڑوں کے دانتوں کی Cavity ہو جائے گی دور

خاص چیزیں

یہ ہربل پاؤڈر گھریلو اجزاء سے تیار کیا جاتا ہے۔

گھر میں بنایا گیا یہ جڑی بوٹیوں کا پاؤڈر دانتوں میں نظر آنے والے کالے کیڑوں سے نجات دلانے میں موثر ہے ۔اس سے دانتوں کے کیڑے ختم ہو جاتے ہیں۔

اس سے منہ کی بدبو بھی دور ہو جاتی ہے۔

۔Oral Health : دانتوں میں پائے جانے والے کالے کیڑے دراصل Cavity ہوتے ہیں جو دانتوں کی سطح پر موجود بیکٹیریا کی وجہ سے ظاہر ہوتے ہیں۔ اس Cavity کی وجہ سے دانتوں میں گڑھے بھی پڑنے لگتے ہیں جس کی وجہ سے دانت کھوکھلے ہو جاتے ہیں اور وقت سے پہلے ٹوٹ جاتے ہیں۔ دانتوں کے اس مسئلے سے نجات کے لیے آپ گھر پر ہربل پاؤڈر تیار کر سکتے ہیں۔ یہ نہ صرف دانتوں سے ان کالے کیڑے یا یوں کہہ لیں کہ کیوٹی کو دور کرے گا بلکہ انہیں صاف اور سفید بھی بنائے گا۔

دانتوں سے کیڑے ختم کرنے کے گھریلو ٹوٹکے | Home Remedies To Get Rid Of Teeth Cavities

آملہ اور نیم پاؤڈر سے تیار کردہ یہ جڑی بوٹیوں کا پاؤڈر مختلف وجوہات کی وجہ سے دانتوں پر اچھا اثر دکھاتا ہے۔ نیم کی اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات مسوڑھوں سے خون آنے کے مسئلے کو بھی دور کرتی ہیں۔ ساتھ ہی اس کے استعمال سے سانس کی بو بھی دور ہو جاتی ہے۔

اس ہربل پاؤڈر کو تیار کرنے کے لیے آپ کو چند اجزاء کی ضرورت ہوگی۔ اس ہربل پاؤڈر کو بنانے کے لیے آپ کو 2 چمچ آملہ پاؤڈر میں ایک چائے کا چمچ نیم پاؤڈر اور آدھا چائے کا چمچ دار چینی پاؤڈر، بیکنگ سوڈا، لونگ پاؤڈر اور نمک ملانا ہوگا۔ تمام اجزاء کو مکس کرنے کے بعد ایک ڈبے میں بند کر کے رکھ دیں۔ آپ کو اس پاؤڈر سے روزانہ اپنے دانتوں کو صاف کرنا ہوگا۔ چند دنوں میں دانتوں میں نظر آنے والے کالے کیڑے دور ہو جائیں گے۔

جڑی بوٹیوں کے پاؤڈر کے علاوہ تیل سے کلی کرنا بھی فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔ تیل سے کلی کرنے کے لیے ناریل کے تیل کو منہ میں ادھر ادھر گھمایا جاتا ہے۔ روزانہ 10 سے 15 منٹ تک ایسا کرنے سے دانتوں اور مسوڑھوں کے بہت سے مسائل دور ہو جاتے ہیں۔

دانتوں کی پریشانی

نمک اور نیم گرم پانی سے گڑگڑا کرنا بھی دانتوں کے لیے اچھا ثابت ہوتا ہے۔ یہ Cavity کو دور کرنے کے ساتھ ساتھ یہ مسوڑھوں کی سوجن کو بھی دور کرتا ہے۔

دستبرداری : یہ مواد بشمول مشورے صرف عام معلومات فراہم کرتا ہے۔ یہ کسی بھی طرح مستند طبی رائے کا متبادل نہیں ہے۔ مزید تفصیلات کے لیے ہمیشہ کسی ماہر یا اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ Qaumi Tarjuman اس معلومات کی ذمہ داری قبول نہیں کرتا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button