ارریہارولاورنگ آبادبانکابکسربھاگلپوربھوجپوربہاربیگوسراےپٹنہپورنیہتعلیم و روزگارجموئیجہان آباددربھنگہروہتاسسارنسپولسرکاری ملازمتسمستی پورسہرسہسیتامڑھیسیوانشیخوپورہشیوہرکٹیہارکشن گنجکھگڑیاکیمورگوپال گنجگیالکھی سرائےمدھوبنیمدھے پورامشرقی چمپارنمظفر پورمغربی چمپارنمونگیرنالندہنواداویشالی

بہار اساتذہ بھرتی : چھٹے مرحلے کی خالی سیٹوں کو ساتویں مرحلے میں منتقل کرنے کی تیاری

بہار، 28 فروری (قومی ترجمان) کونسلنگ کے بعد بھی پرائمری اور سیکنڈری اساتذہ کی بھرتی میں بڑی آسامیاں خالی رہنے والی ہیں۔ منصوبہ بندی کے عمل کے رجحان کے مطابق چھٹے مرحلے کی کل 1.23 لاکھ آسامیوں کو بڑی مشکل سے 50 فیصد بھی بھرنا مشکل ہو رہا ہے۔ اس صورتحال میں محکمہ تعلیم چھٹے مرحلے کی خالی آسامیوں کو ساتویں مرحلے میں منتقل کرنے پر سنجیدگی سے غور کر رہا ہے۔ ساتویں مرحلے کا اعلان مارچ میں کسی بھی وقت کیا جا سکتا ہے۔

ذرائع کے مطابق ساتویں مرحلے میں سنٹرلائزڈ طریقے سے درخواستیں آن لائن لی جا سکیں گی۔

اس کے ساتھ اساتذہ امیدواروں کو ہر پلاننگ یونٹ میں جا کر درخواست دینے کی کوئی مجبوری نہیں ہوگی۔ وہ صرف آن لائن درخواست دے کر اس بھرتی کے عمل میں شامل ہو جائے گا۔ تاہم ان تمام تبدیلیوں کا سرکاری طور پر اعلان ہونا باقی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

بہار میں راشن کارڈ کے لیے آن لائن درخواست شروع، جلدی کریں رجسٹریشن، یہاں جانیں درخواست دینے کا طریقہ

۔Mobile phone میں ہی ڈاؤن لوڈ کریں Digital ووٹر کارڈ (Voter Card) ، ووٹنگ کے ساتھ فوٹو آئی ڈی میں بھی آئے گا کام، ڈاؤن لوڈنگ کا جانیں طریقہ

ساتویں مرحلے کی منصوبہ بندی کون کرے گا؟

محکمہ تعلیم ان آپشن پر غور کر رہا ہے۔ ماہرین کے مطابق محکمہ تعلیم منصوبہ بندی کے لیے ایک خودمختار ادارہ ہے۔

ساتویں مرحلے کے لیے منصوبہ بندی کے عمل میں بہتری کی تیاری

سنٹرلائزڈ طریقے سے آن لائن درخواستیں لینے کا امکان

اب تک پرائمری اساتذہ کی صرف 42000 آسامیوں پر تقرری کی گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

گھر بیٹھے آدھار کارڈ میں اپنا موبائل نمبر یا نام، پتہ تبدیل کریں، جانیں یہ آسان طریقہ

اگر PAN کارڈ کو ADAHAR CARD سے لنک نہیں کیا ہے تو اب کر لیں ، ورنہ لگے گا جرمانہ ، جانیں لنک کرنے کا طریقہ اور لنک کرنے کی آخری تاریخ

ٹیچر پلاننگ کے چھٹے مرحلے میں 90762 پرائمری اور 32714 سیکنڈری اور ہائر سیکنڈری اساتذہ کی تقرری کی جارہی ہے۔ اب تک پرائمری اساتذہ کی صرف 42000 آسامیاں پر کی گئی ہیں۔ تقریباً ڈھائی ہزار پوسٹوں کے لیے مزید کونسلنگ کی جانی ہے۔ ساتھ ہی سیکنڈری اساتذہ کے چھٹے مرحلے میں 32714 آسامیوں کے لیے منصوبہ بندی کا عمل فی الحال عدالتی حکم کی وجہ سے ملتوی ہے۔

کمیٹی بھی بنائی جا سکتی ہے۔

اس میں تعلیم اور متعلقہ محکموں کے ماہرین شامل ہو سکتے ہیں۔ درحقیقت پلاننگ یونٹس کی سرگرمیاں اب محکمہ تعلیم کے لیے خوش کن نہیں ہیں۔ تاہم، محکمے نے بحالی کے لیے بہار گورنمنٹ اسٹاف سلیکشن کمیشن، پبلک سروس کمیشن یا لوئر سروس سلیکشن بورڈ کا آپشن بھی کھلا رکھا ہے۔ تقریباً 4 سال قبل حکومت نے ایک کمیٹی بنائی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button