اہم خبریںعالمی خبریں

روس-یوکرین کشیدگی LIVE: پوتن نے یوکرین کے خلاف جنگ کا کیا اعلان، بیان کے بعد ہی باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں میں دھماکے ہوئے

روس کے صدر نے یوکرین کے خلاف اعلان جنگ کر دیا ہے۔ روسی صدر پتن نے نیٹو کو دھمکی دی ہے کہ اگر یوکرین نے تعاون کیا تو اس کے سنگین نتائج ہوں گے۔ اس بیان کے فوراً بعد یوکرین میں باغیوں کے زیر قبضہ علاقے میں بڑے دھماکوں کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق کراماتوسک میں 2 دھماکوں کی آوازیں سنی گئی ہیں۔روسی فوجی کریمیا کے راستے یوکرین میں داخل ہو رہے ہیں۔ دو لاکھ سے زائد روسی فوجی سرحد پر تعینات ہیں۔

اقوام متحدہ نے امن کی اپیل کی ہے۔

جنگ کے خطرے کے درمیان فرانس نے بدھ کے روز اپنے شہریوں سے کہا کہ وہ بغیر کسی تاخیر کے یوکرین چھوڑ دیں۔ فرانسیسی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرین کی سرحدوں پر روسی فوجیوں کے جمع ہونے سے شدید کشیدگی پیدا ہو گئی ہے۔ اس کے علاوہ روس نے دو علیحدگی پسند علاقوں کو تسلیم کر لیا ہے اور یوکرین نے ہنگامی حالت نافذ کر دی ہے۔ اس لیے یوکرین میں موجود فرانسیسی شہریوں کو بلا تاخیر ملک چھوڑ دینا چاہیے۔

ہندوستان کے وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون سے ملاقات کی۔ میٹنگ میں روس-یوکرین بحران، ہند-بحرالکاہل میں باہمی تعاون، ہندوستان اور فرانس کے درمیان سفارتی، اقتصادی اور دفاعی تعلقات کو مضبوط بنانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ہندوستان نے مشرقی یورپ میں کشیدگی کو کم کرنے کے لیے میکرون کی کوششوں کی تعریف کی۔ ایک دن پہلے، فرانسیسی انسٹی ٹیوٹ آف انٹرنیشنل ریلیشنز میں تقریر کرتے ہوئے، جے شنکر نے فرانس کی تعریف کی اور اسے عالمی سپر پاور قرار دیا۔

روس کے خلاف حکمت عملی طے کرنے کے لیے یورپی یونین جمعرات کو ایک انتہائی اہم اجلاس منعقد کرے گی۔ ویسے خاص بات یہ ہے کہ یہ میٹنگ بیلاروس میں ہو گی جو پہلے ہی روس کے ساتھ ہے اور روس کی فوج بیلاروس کی سرزمین پر موجود ہے۔ اسی دوران یوکرین کے معاملے پر آج اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (یو این ایس سی) کا ایک بار پھر اجلاس ہوگا۔ اس معاملے پر ایک ہفتے میں یو این ایس سی کا یہ دوسرا اجلاس ہے۔

سرحد پر مسلسل بڑھتی ہوئی کشیدگی کے درمیان یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے ٹی وی پر لائیو آکر جنگ کو ٹالنے کی پرجوش اپیل کی۔ انہوں نے روسی عوام کو روس یوکرین کی مشترکہ تاریخ اور ثقافت کی بھی یاد دلائی۔ زیلنسکی نے کہا کہ انہوں نے ولادیمیر پوتن کو بھی فون کیا تھا لیکن کوئی جواب نہیں ملا۔ یوکرائنی صدر نے کہا کہ ان کا ملک امن چاہتا ہے۔ یوکرینی باشندوں کو اسلحہ رکھنے کی اجازت

روس کے ساتھ ممکنہ جنگ کے خطرے کو مدنظر رکھتے ہوئے یوکرین کی پارلیمنٹ نے شہریوں کو ہتھیار رکھنے کی اجازت دینے کا قانون منظور کیا ہے۔ اسی وقت، جرمن چانسلر اولاف شولز آج G7 رہنماؤں کی ایک ورچوئل میٹنگ کریں گے۔ یوکرین میں قومی ایمرجنسی کا اعلان کر دیا گیا۔

یوکرین کی پارلیمنٹ نے روسی حملے کے پیش نظر قومی ایمرجنسی کا اعلان کر دیا ہے۔ ایمرجنسی کے اعلان کے ساتھ ہی یوکرین نے اپنے 30 لاکھ افراد کو فوری طور پر روس چھوڑنے کو کہا ہے۔ روس نے بدھ کے روز یوکرین کے بینکوں اور دفاع، خارجہ، داخلی سلامتی جیسی اہم ویب سائٹس پر سائبر حملہ کیا۔ نائب وزیر اعظم فیدوروف نے کہا کہ روس مناسب جواب دے گا۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button