اہم خبریںاہم خبریں، تازہ سرخیاںبین الاقوامی خبریںتازہ تریندہلی

بہن سے شرط لگا کر بیٹی نے باپ سے بنایا جسمانی تعلقات، پھر کر لی شادی، عدالت نے سکھایا سبق

نئی دہلی، 03 نومبر: آج کے جدید دور میں لوگ رشتوں کی اہمیت کو بھولتے جا رہے ہیں۔ اب امریکہ سے ایک حیران کن معاملہ سامنے آیا ہے جہاں ایک شخص نے پہلے اپنی جوان بیٹی کے ساتھ جنسی تعلقات استوار کیے، پھر اس سے شادی کر لی۔ تاہم، اس فعل کے لئے اسے جیل میں ڈال دیا گیا ۔



بیٹی کو پیدا ہونے کے بعد چھوڑا



ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق نیبراسکا کے ٹریوس فیلڈگرو کی اہلیہ نے سال 2000 میں ایک بچے کو جنم دیا جس کا نام سمانتھا رکھا گیا تاہم پیدائش کے چند روز بعد ہی وہ کسی اور کے ساتھ نئی زندگی گزارنے چلی گئیں۔ جب بیٹی بڑی ہوئی تو ٹریوس اس سے ملا۔ تین سال کے بعد ان دونوں کے درمیان جنسی تعلق بھی ہو گیا۔ تب سمانتھا کی عمر بھی 20 سال کے لگ بھگ تھی۔




بہن سے لگائی تھی شرط



اگرچہ دونوں کے الگ الگ کنیت ہیں لیکن وہ حیاتیاتی بیٹی ہے۔ اس کے ساتھ ہی جب لوگوں کو اس معاملے کا علم ہوا تو انہوں نے صفائی پیش کی کہ ایسا کچھ نہیں ہوا لیکن ڈی این اے ٹیسٹ نے سب بے نقاب کر دیا۔ خاص بات یہ ہے کہ بالغ ہونے کے بعد بھی سمانتھا اپنے والد کے ساتھ رشتہ قائم کرنے کی خواہش مند تھیں۔ اس نے اپنی سوتیلی بہن کے ساتھ شرط لگائی کہ وہ ٹریوس کے ساتھ تعلقات قائم کرنے کے دکھائے گی۔



ڈی این اے رپورٹ سے آشکار ہوئی حقیقت



سوشل میڈیا پربھی ان دونوں نے کچھ زیادہ باتیں کر دیں جس کے بعد معاملے کی تحقیقات شروع کر دی گئی۔ قانون کے تحت کوئی بھی اپنی بیٹی سے شادی نہیں کر سکتا اس لیے دونوں کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا گیا۔ پولیس کو تفتیش میں پتہ چلا کہ سمانتھا کی سوتیلی بہن اس کے ساتھ نہیں ملتی تھی، اسے جلانے کے لیے اس نے اپنے والد کے ساتھ تعلقات استوار کیے اور پھر غیر قانونی شادی کر لی۔ ڈی این اے ٹیسٹ سے پتہ چلا کہ ٹریوس سمانتھا کے والد ہیں۔اس کے لیے 99.99 فیصد رپورٹ مثبت آئی۔


کتنے سال کی ہوئی سزا ؟



عدالت نے سماعت کے دوران باپ اور بیٹی دونوں کو مجرم قرار دیا۔ اس کے بعد ٹریوس کو 2 سال جبکہ سمانتھا کو صرف 9 ماہ کی سزا سنائی گئی۔ عدالت نے واضح کیا تھا کہ رہائی کے بعد دونوں ایک دوسرے سے نہیں ملیں گے۔ ٹریوس کو رواں سال جنوری میں رہا کیا جانا تھا تاہم اب تک دونوں کی کوئی خبر سامنے نہیں آئی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button