اہم خبریںبہارسیوانعجیب و غریب

بہار: محکمہ ڈاک کے پارسل میں گھس گیا ‘بھوت’! راستے میں بدلا سامان، ریسیور نے پی ایم او سے کی شکایت

یہی نہیں ریسیور کو اس کی جگہ کچھ اخروٹ بھی ملا ہے۔ اس کے بعد ریسیور نے ہنگامہ کھڑا کردیا۔

محکمہ ڈاک نے معاملے کی جانچ سونپی

سیوان ،13 فروری (قومی ترجمان) بھارتی محکمہ ڈاک کے کارنامے بہار کے سیوان سے منظر عام پر آئی ہے ۔ معاملہ یہ ہے کہ جموں و کشمیر سے محکمہ ڈاک کے ذریعے ایک پارسل بھیجا گیا تھا اس میں کشمیری شالیں تھیں۔ کچھ مہنگی اشیاء بھی تھیں۔ لیکن حیران کن بات یہ ہے کہ یہ سارا سامان راستے میں ہی غائب ہوگیا۔

یہی نہیں ریسیور کو اس کی جگہ کچھ اخروٹ بھی ملا ہے۔ اس کے بعد ریسیور نے ہنگامہ کھڑا کردیا۔

یہ بھی پڑھیں

یہ روبوٹ ریت کا ایک ذرہ بھی اٹھا سکتا ہے

ٹویٹر پر پی ایم او سے اس پورے معاملے کی شکایت کرنے کے ساتھ ساتھ پوسٹل سپرنٹنڈنٹ کو بھی جانکاری دی گئی ہے۔ ایسے میں سوال یہ ہے کہ بیچ میں پارسل کہاں گیا؟

ہم آپ کو بتاتے چلیں کہ 27 جنوری کو جموں کے کٹرا میں پوسٹ آفس سے سیوان کے راجندر نگر کے رہنے والے سچن کمار کو ایک پارسل بھیجا گیا تھا۔ پارسل میں 3 کشمیری شالیں، 2 سٹالز اور دیگر اشیاء موجود تھیں۔ 10 فروری کو سچن کو اطلاع ملی کہ ان کا پارسل آ گیا ہے۔

سچن پارسل لینے کے لیے محکمہ ڈاک پہنچا۔ لیکن جب پارسل کھولا گیا تو اس میں سامان غائب تھا اور اس کی جگہ اخروٹ رکھے ہوئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

عجیب و غریب : 19 سالہ لڑکے کو 2 فٹ 10 انچ قد والی خاتون سے ہو گیا پیار ، کہا دل سے پیار ہے قد سے نہیں!

محکمہ ڈاک نے معاملے کی جانچ سونپی

محکمہ ڈاک کے علاوہ صارف بھی حیران ہے کہ بیچ میں سامان کہاں گیا؟ جب کہ پارسل مکمل طور پر پیک ہے، اس میں صرف اخروٹ رکھے گئے ہیں۔ سچن نے پی ایم او کو ٹیگ کرتے ہوئے شکایت کی ہے۔

اس کے علاوہ سیوان ڈویژن کے سپرنٹنڈنٹ آلوک کمار کو بھی تحریری شکایت دی گئی ہے۔ شکایت لینے کے بعد انسپکٹر منوہر کو پوسٹ آفس نے طلب کیا ہے۔ اس کے ساتھ معاملے کی جانچ کی ذمہ داری بھی سونپی گئی ہے۔

پوسٹل سپرنٹنڈنٹ نے واقعہ کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے پورے معاملے کی تحقیقات کرنے کی بات کہی ہے۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

سورس : آج تک

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button