Foodsبہارتازہ ترینقومی خبریں

راشن کارڈ والوں کے لیے بڑی خبر، قوانین میں ہوئی تبدیلی، جانیں کیا ہے نیا قانون

راشن کارڈ کا فائدہ اٹھانے والوں کے لیے ایک بڑی خبر ہے۔ فوڈ اینڈ پبلک ڈسٹری بیوشن ڈپارٹمنٹ نے راشن کارڈ کے قوانین میں تبدیلی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ دراصل محکمہ سرکاری راشن کی دکانوں سے راشن لینے والے اہل لوگوں کے لیے مقرر کردہ معیار میں تبدیلی کر رہا ہے۔ نئے معیار کا مسودہ اب تقریباً تیار ہے۔ اس سلسلے میں ریاستی حکومت کے ساتھ کئی دور کی میٹنگیں بھی ہوئی ہیں۔


آئیے جانتے ہیں کیا ہوگا بت نئے قانون میں ؟


محکمہ خوراک اور عوامی تقسیم کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کل 80 کروڑ لوگ نیشنل فوڈ سیکورٹی ایکٹ (این ایف ایس اے) کے فوائد حاصل کر رہے ہیں۔ تاہم ان میں بہت سے لوگ ہیں جو مالی طور پر خوشحال ہیں۔ اس کو ذہن میں رکھتے ہوئے عوامی تقسیم کی وزارت نے معیارات میں تبدیلی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


دراصل اب نئے معیار کو مکمل طور پر شفاف بنایا جائے گا تاکہ کسی قسم کی گڑبڑ نہ ہو سکے۔اس تناظر میں فوڈ اینڈ پبلک ڈسٹری بیوشن ڈپارٹمنٹ نے بتایا کہ پچھلے 6 مہینوں سے ریاستوں کے ساتھ معیارات میں تبدیلی کو لے کر میٹنگ کی جا رہی ہے۔ ریاستوں کی طرف سے دی گئی تجاویز کو شامل کر کے اہل افراد کے لیے نئے معیارات تیار کیے جا رہے ہیں۔


لہٰذا یہ معیار جلد تیار کر لیا جائے گا۔ نئے معیار کے نفاذ کے بعد اس کا فائدہ صرف اہل افراد کو ملے گا، نااہل افراد اس کا فائدہ حاصل نہیں کر سکیں گے۔ ضرورت مندوں کو ذہن میں رکھتے ہوئے یہ تبدیلی کی جارہی ہے۔ خوراک اور عوامی تقسیم کے محکمے کے مطابق اب تک دسمبر 2020 تک 32 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں ‘ون نیشن، ون راشن کارڈ (او این او آر سی) اسکیم کو نافذ کیا جا چکا ہے۔ تقریباً 69 کروڑ مستفیدین یعنی NFSA کے تحت آنے والی آبادی کا 86 فیصد اس اسکیم سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ ہر ماہ تقریباً 1.5 کروڑ لوگ ایک جگہ سے دوسری جگہ جا کر بھی فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button