اہم خبریںبین ریاستی خبریںسائنس / کلائمیٹ

دہلی-گروگرام سمیت ان شہروں کو اگلے سال ملے گا 5G نیٹ ورک کا تحفہ

دہلی-گروگرام سمیت ملک کے کئی بڑے شہروں کو اگلے سال 5G (5G سروس) کا تحفہ مل سکتا ہے۔ درحقیقت محکمہ ٹیلی کمیونیکیشن کے تحت مقامی 5G ٹرائل (ٹیسٹ بیڈ) پروجیکٹ آخری مرحلے میں پہنچ گیا ہے۔ یہ ٹرائل 31 دسمبر 2021 تک مکمل ہونے کی امید ہے۔ اس کے بعد میٹرو اور بڑے شہروں جیسے گروگرام، حیدرآباد، لکھنؤ میں اگلے سال 5G خدمات شروع کی جائیں گی۔ ٹیلی کام آپریٹرز بشمول Airtel، Jio اور Vodafone Idea نے گروگرام، بنگلورو، کولکتہ، ممبئی، چندی گڑھ، دہلی، جام نگر، احمد آباد، چنئی، حیدرآباد، لکھنؤ، پونے اور گاندھی نگر میں 5G ٹیسٹ بیڈ قائم کیے ہیں۔


اس کے بعد ان شہروں میں 5G نیٹ ورک شروع کیا جائے گا۔ محکمہ ٹیلی کمیونیکیشن کی جانب سے فنڈز سے چلنے والا 5G ٹرائل پروجیکٹ آخری مرحلے میں پہنچ گیا ہے۔ اس کے نفاذ کے لیے آٹھ ایجنسیاں مصروف عمل ہیں، جن میں آئی آئی ٹی بمبئی، آئی آئی ٹی دہلی، آئی آئی ٹی حیدرآباد، آئی آئی ٹی مدراس، آئی آئی ٹی کانپور، انڈین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس (آئی آئی ایس سی) بنگلور، سوسائٹی فار اپلائیڈ مائیکرو ویو الیکٹرانکس انجینئرنگ اینڈ ریسرچ اور سینٹر فار ایکسیلنس ان وائرلیس ٹیکنالوجیز شامل ہیں۔ جو 36 ماہ سے کام کر رہے ہیں۔

2021 کی کامیابیوں پر ٹیلی کمیونیکیشن ڈیپارٹمنٹ نے کہا کہ بھارت نیٹ سے لے کر نکسل متاثرہ علاقوں میں موبائل ٹاورز کی تنصیب کے ساتھ ساتھ ٹیلی کام سیکٹر میں مالی بحران کو دور کرنے کا قدم سب سے اہم تھا۔ اس کے تحت مختلف اصلاحی اقدامات بھی کیے گئے۔ ٹیلی کام سیکٹر میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری (FDI) 2002 اور 2014 کے درمیان 62,386 کروڑ روپے سے 2014 اور 2021 کے درمیان تقریباً 150 فیصد بڑھ کر 1,55,353 کروڑ روپے ہوگئی۔

محکمہ ٹیلی کام کی طرف سے کہا گیا ہے کہ تقریباً 224 کروڑ روپے کی لاگت کا یہ پروجیکٹ 31 دسمبر 2021 تک مکمل ہونے کی امید ہے۔ اس سے ملک میں 5G صارف کے آلات اور نیٹ ورک آلات کی جانچ کی راہ ہموار ہوگی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button