اہم خبریںبین ریاستی خبریںدہلی

دہلی، ممبئی، چنئی سمیت کئی شہروں میں اگلے سال سے شروع ہوگی 5G سروس، یہ رہی مکمل فہرست

دہلی 28/دسمبر (قومی ترجمان) دہلی-ممبئی سمیت کل 13 شہروں میں اگلے سال سے 5G سروس شروع ہو جائے گی۔

ایئرٹیل، جیو، وی نے آزمائش کے لیے ٹیسٹ سائٹ قائم کی۔

کل آٹھ ایجنسیاں مل کر ایک خصوصی تحقیقی پروگرام چلا رہی ہیں۔

ہندوستان میں 5G ٹیلی کام سروس 2022 میں شروع ہونے جا رہی ہے۔ تاہم تازہ ترین معلومات کے مطابق ابتدائی مرحلے میں گروگرام، بنگلورو، کولکاتاتہ،ممبئی، چندی گڑھ، دہلی، جام نگر، احمد آباد، چنئی، حیدرآباد، لکھنؤ، پونے اور گاندھی نگر میں 5 جی سروس شروع کی جائے گی۔ بھارت کی معروف ٹیلی کام کمپنیوں Bharti Airtel، Reliance Jio اور Vodafone Idea (Vi) نے بھی مذکورہ تمام شہروں میں 5G آزمائشی علاقے قائم کر لئے ہیں۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کی خبر کے مطابق "یہ تمام میٹروز اور بڑے شہر اگلے سال ملک میں 5G سروس شروع کرنے والے پہلے مقامات ہوں گے،” ٹیلی کمیونیکیشن کے محکمے (DoT) نے پیر کو بتایا۔ 5G لانگ ٹرم ایوولوشن (LTE) موبائل براڈ بینڈ نیٹ ورکس میں تازہ ترین اپ گریڈ ہے۔ دنیا کے کئی بڑے ممالک ایک عرصے سے اس سروس سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ 5G 4G سے کئی گنا تیز ہوگا اور اس میں چند منٹوں میں کئی جی بی فائلز ڈاؤن لوڈ کرنے کی صلاحیت ہوگی۔

آٹھ ایجنسیاں بشمول انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (IIT) بمبئی، آئی آئی ٹی دہلی، آئی آئی ٹی حیدرآباد، آئی آئی ٹی مدراس، آئی آئی ٹی کانپور، انڈین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس (آئی آئی ایس سی) بنگلورو، سوسائٹی فار اپلائیڈ مائیکرو ویو الیکٹرانکس انجینئرنگ اینڈ ریسرچ (سمیر) اور سینٹر آف ایکسی لینس۔ ان میں وائرلیس ٹیکنالوجیز (CEWIT) شامل ہیں، جو ‘انڈیجینس 5G ٹیسٹ بیڈ پروجیکٹ’ کے نام سے ایک تحقیقی پروگرام چلا رہی ہے۔ یہ 2018 میں شروع ہوا تھا اور اسے 31 دسمبر 2021 تک مکمل ہونا ہے۔ اس پروگرام کی مالی اعانت محکمہ ٹیلی کمیونیکیشن کرتا ہے اور اس پروگرام میں اب تک 224 کروڑ روپے خرچ ہو چکے ہیں۔

اس ماہ کے شروع میں ٹیلی کام سکریٹری کے راجرمن نے امید ظاہر کی تھی کہ جنوری کے اوائل تک 5G ٹرائل بیڈز شروع ہو جائیں گے۔ راجرمن نے 9 دسمبر کو انڈیا موبائل کانگریس میں کہا کہ "ہمیں امید ہے کہ جنوری کے اوائل تک اس 5G ٹیسٹ بیڈ کو شروع کر دیا جائے گا، جو SMEs اور صنعتوں کے دیگر طبقات کو ایک ورکنگ پلیٹ فارم پر آنے کے قابل بنائے گا۔”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button