اہم خبریںبہاربین ریاستی خبریں

جھارکھنڈمیں ماب لنچنگ کے قصورواروں کو سزائےموت ، اسمبلی نے منظورکیا بل ، بی جے پی برہم

رانچی 21 دسمبر ( قومی ترجمان ) جھارکھنڈ قانون ساز اسمبلی کے سرمائی اجلاس کے چوتھے دن جھارکھنڈ ماب وائلنس اینڈ موب لنچنگ پریوینشن بل 2021 منظور کر لیا گیا ہے ۔ وزیر پارلیمانی امور عالمگیر ہے ۔ عالم نے بل ایوان میں پیش کیا ہے ۔ جس پر اسپیکر نے ووٹنگ کروائی اور سب نے اپنا ووٹ بھی ڈال دیا۔اسی دوران بی جے پی نے بل پر بحث کے دوران ہنگامہ کھڑا کر دیا ۔ بی جے پی کے ایم ایل اے ویل تک پہنچ گئے ۔

انہوں نے حکومت پراس قانون کے ذریعے خوش کرنے کا الزام بھی لگایا ۔ پارٹی کے تین ایم ایل اے امر بوری ، امیت منڈل اور رام چندر چند ر اونٹی نے بھی ترمیمی تجاویز پیش کیں لیکن سبھی کو مسترد کر دیا گیا ۔ بی جے پی ایم ایل اے امت منڈل نے کہا ہے کہ حکومت کا یہ سیاہ باب پورے جھار کھنڈ میں لکھا جاۓ گا ۔ انہوں نے اسے تیار کرنے والے عہد یداروں کی نیت پر بھی سوال اٹھایا ہے ۔ انہوں نے کہاہے کہ انگریزی میں mob لکھا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ دو یا دو سے زیادہ ۔ کس بنیاد پر دو افراد کو ہجوم لکھا گیا ہے؟ حکومت کو خوش کرنے کے لیے یہ آئی اے ایس افسران کا کام ہے۔

جبکہ امر بوری نے کہاہے کہ ایک مخصوص طبقہ کو خوش کرنے کے لیے قبائلی بھائیوں پر تشدد کیا جارہا ہے ۔ یہ جھار کھنڈ مخالف بل ہے۔اب جھار کھنڈ میں ماب لنچنگ سے کسی کی موت ہوتی ہے تو مجرموں کو سزاۓ موت دی جائے گی۔اس کے ساتھ ساتھ 10 لاکھ روپے کا جرمانہ بھی ہو سکتا ہے ۔ اگر کسی کو لنچنگ میں چوٹ پہنچتی ہے تو قصور وار کو تین سال تک قید اور ایک لاکھ سے تین لاکھ روپے جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے

دوسری جانب اگر کسی کو شدید چوٹ پہنچتی ہے تو مجرم کو 10 سال قید سے لے کر عمر قید اور تین سے پانچ لاکھ روپے تک جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے ۔ یہ قانون مغربی بنگال میں پہلے سے نافذ ہے ۔ اب یہ قانون جھارکھنڈ میں بھی لاگو ہو رہا ہے ۔ ماب لنچنگ کے واقعات کو روکنے کے لیے ریاستی حکومت نے جھار کھنڈ پریوینشن آف لنچنگ بل 2021 کا مسودہ تیار کیا ہے ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button