ارریہاورنگ آبادبھاگلپوربہاربیگوسراےپٹنہپورنیہجموئیدربھنگہروہتاسسمستی پورکشن گنجمشرقی چمپارنمظفر پورمغربی چمپارن

بہار: اب پنچ سرپنچ کے ذریعے ہوگی زمین کی تقسیم

پٹنہ ۔ ریونیو اور لینڈ ریفارمز کے وزیر رام سورت کمار نے کہا کہ اب خاندانی جائیداد کی تقسیم اکثریت کی بنیاد پر کی جا سکتی ہے۔ اس کے لیے خاندان میں اتفاق رائے پیدا کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ یہ انتظام قانونی ڈویژن میں پہلے سے موجود ہے۔ لیکن اب حکومت پنچایت پر مبنی تقسیم کے انتظامات کرنے جا رہی ہے۔ ایک شرط یہ ہوگی کہ پنچایت کے نمائندے، سرپنچ اور پنچ وغیرہ کا ہونا ضروری ہوگا۔

نیائے متروں کو بھی تقسیم کے نظام میں رکھا جائے گا تاکہ کسی کو قانونی حقوق سے محروم نہ کیا جا سکے۔

ریونیو اور لینڈ ریفارمز وزیر بدھ کو اپوزیشن میں آر جے ڈی کے رام چندر پوروے کے مختصر نوٹس کے سوال کا جواب دے رہے تھے۔ وزیر نے کہا کہ اگر تین بھائیوں میں سے ایک تقسیم نہیں چاہتا تو اکثریت کی بنیاد پر تقسیم ہو جائے گی۔ لیکن انہیں نوٹس دیا جائے گا۔ نوٹس ملنے کے بعد بھی نہ آنے کی صورت میں تمام پلاٹوں سے ان کا حصہ نکال دیا جائے گا۔ لیکن یہ فارمیٹ ابھی فائنل نہیں ہوا ہے۔تکنیکی رکاوٹوں کو دور کرنے کے بعد ہی اس پر عمل درآمد کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

گھریلو علاج / Home Remedies : جسم پر جگہ جگہ خارش شروع ہو گئی ہے تو ان 5 گھریلو ٹوٹکوں پر کریں عمل ، آپ کو خارش کے مسئلے سے مل جائے گی نجات

وزیر نے کہا کہ فہرست زونل دفاتر کو دے دی گئی ہے ایسی صورت میں دائر درخواست کو مسترد کرنا ہوگا۔ اس کے علاوہ کوئی درخواست مسترد نہیں کی جا سکتی۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ مسترد کی گئی 72 لاکھ 28 ہزار 241 درخواستوں میں سے 62 لاکھ 48 ہزار 335 کو نمٹا دیا گیا ہے۔ بقیہ کے تصفیے کا عمل جاری ہے۔ اسی طرح)”پری مارجن پورٹل” پر 16 لاکھ 75 ہزار 498 درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔ 14 لاکھ 68 ہزار 766 کا فیصلہ کر دیا گیا ہے ۔

بیرون ملک بیٹھا بھائی بھی تقسیم کی دیکھ سکتا ہے ویڈیوگرافی، سب کچھ آن ریکارڈ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں

گھر بیٹھے آدھار کارڈ میں اپنا موبائل نمبر یا نام، پتہ تبدیل کریں، جانیں یہ آسان طریقہ

आरबीआई ने पेटीएम पेमेंट्स बैंक को नए खाते खोलने से रोककर झटका दिया।

اگر کوئی بھائی بیرون ملک بھی رہتا ہے تو تقسیم میں حصہ لینے میں کوئی حرج نہیں ہوگا۔ مشترکہ اراضی اور جائیداد کی ویڈیو گرافی ہوگی۔ مقامی عوامی نمائندے، سرپنچ، پنچ، نیائے متر، سرکل انسپکٹر (CI) اور ملازمین کی موجودگی میں تقسیم کی مکمل ویڈیو گرافی کی جائے گی۔ سب ریکارڈیڈ رہے گا۔ بیرون ملک بیٹھے ہوئے بھائی بھی تقسیم کو دیکھ سکیں گے۔

تقسیم میں کوئی معاہدہ نہ ہونے کی صورت میں تمام بھائیوں کو ہر ایک کھیسرہ کی زمین میں برابر حصہ ملے گا۔ پہلے گاؤں میں پنچایت کے ذریعے زمین کی تقسیم ہوتی تھی۔ اس میں ایک پنچ نامہ ہوتا تھا۔ وزیر ریونیو اینڈ لینڈ ریفارمز کا کہنا ہے کہ محکمہ جو نیا انتظام کرنے جا رہا ہے، اس سے تقسیم میں آسانی ہوگی۔ باہر رہنے والے خاندان کے کسی فرد کو بھی فوری طور پر زمین کی تقسیم کا فائدہ ملے گا۔ خاندان میں چار بھائی ہیں اور اگر تین بھائی بھی تقسیم نہیں کرنا چاہتے تو چوتھا بھائی چاہے تو تقسیم کر سکتا ہے۔

حوالہ : روزنامہ بھاسکر

قومی ترجمان کا ٹیلیگرام گروپ جوائن کرنے کے لیے یہاں کلک کریں!

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button