اہم خبریں

اومیکرون کی دہشت___

اومیکرون کی دہشت
مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نائب ناظم امارت شرعیہ پھلواری شریف پٹنہ
دنیا ابھی کورونا کی دہشت اور وحشت سے پورے طور پر نکلی بھی نہیں تھی کہ اب اس کے نئے ویرینٹ اومیکرون نے پوری دنیا کو دہشت میں مبتلا کر دیا ہے ، یہ ویرینٹ جنوبی افریقہ میں پایا گیا ہے اور تیزی سے اپنے پاؤں پھیلا رہا ہے ، جس کی وجہ سے تمام حکومتوں نے کورونا سے راحت کے بعد بدلی ہوئی پالیسی پر سے نظر ثانی کا کام شروع کر دیا ہے ۔
ابھی چند دن قبل وزارت داخلہ، خارجہ اور محکمۂ صحت سے متعلق مشترکہ مشاورتی میٹنگ میں بین الاقوامی پروازوں کو پھر سے شروع کرنے کا اعلان کیا تھا، لیکن نئے ویرینٹ سے پیدا شدہ خطرات کی وجہ سے وزیر اعظم نے اس فیصلے پر نظر ثانی کی ہدایت دی ہے اور بیرون ملک سے آنے والوں کی جانچ اور گہری نظر رکھنے کی ضرورت پرزور دیا ہے ، اس نئے ویرینت اور میکرون نے جنوبی افریقہ کے بعد ہانگ کانگ، بوٹسوانہ، اسرائیل، اور بلیجیم تک کا سفر طے کر لیا ہے ، حالات کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے برطانیہ، آسٹرلیا، کینڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی اور ہالینڈ نے نو افریقی ممالک سے یسوتھو، اسواتینی، موربیقی، مالی اور بوتسوانہ سے آنے والی پروازوں پر پابندی لگا دی ہے ، خبر یہ بھی ہے کہ اب اس فہرست میں امریکہ، سعودی عرب، سری لنکا، برازیل ، ایران ، یمن ، متحدہ عرب امارات سمیت کچھ دوسرے ممالک بھی شامل ہو گیے ہیں، ہندوستان حالات پر کڑی نظر رکھے ہوئے ہے، اس معاملہ میں حزب مخالف بھی حکومت کے ساتھ ہے اور اس سے چوکنا رہنے اور متاثرہ ملکوں سے پروازوں کو روکنے کی ضرورت بتائی ہے ، اس سلسلے میں حکومت نے جو اقدام کیے ہیں اس کے پیش نظر ۴۸؍ گھنٹے قبل کی کوڈ ٹسٹ رپورٹ دینی ہوگی ، اور چودہ دن تک کو رنٹائین رہنا ہوگا۔عام شہریوں سے بھی وزیر اعظم نے اپیل کی ہے کہ احتیاطی تدابیر پر عمل جاری رکھیں، جسمانی فاصلے اور ماسک لگانا بھی احتیاطی تدابیر کا حصہ ہے، اسے اپنا نا چاہیے اور اس معاملہ میں سستی نہیں کرنی چاہیے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button