اتر پردیشاہم خبریںبین ریاستی خبریںدہلیعالمی خبریں

آج کی اہم خبریں / 30 دسمبر 2021

نئی دہلی (قومی ترجمان)

اترپردیش : کہیں ہلکی کہیں تیز،بارش سے ہوا ٹھنڈ میں اضافہ

نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق لکھنؤ سمیت اترپردیش کے بیشتر اضلاع میں منگل سے بارش کا سلسلہ جاری رہا، رات بھر ہونے والی بارش کے بعد بدھ کو دن میں بھی کبھی کبھی بارش کا سلسلہ جاری رہا جس کے سبب سردی میں اضافہ ہوگیا ہے لیکن اعظم گڈھ سمیت کئی اضلاع میں آج صبح سے ہی موسم صاف ہے،دھوپ سے لوگوں کو ٹھنڈ سے راحت ملنے کے آثار ہیں ، دوسری طرف محکمہ موسمیات کے مطابق اتراکھنڈ سمیت پہاڑی ریاستوں میں ہونے والی برف باری کا اثر نشیبی علاقوں پر بھی پڑے گا محکمہ کے مطابق آئیندہ 24 گھنٹے میں ریاست کا درجہ حرارت مزید پانچ ڈگری کم ہوجاۓ گا ، وہیں جمعرات کو بھی بارش امکان ہے
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

ملک میں کرونا کیسز میں پھر اضافہ شروع،کرونا اومیکرون متاثرہ کی تعداد بڑھنے سے حالات تشویشناک

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق ملک میں ایک بار پھر کورونا وائرس کے نئے کیسز میں اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ کچھ عرصے سے روزانہ 6 ہزار کے قریب آنے والے نئے کیسز آج 9 ہزار سے تجاوز کر چکے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک بھر میں 9,195 نئے کیسز درج ہوئے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 302 مریض ہلاک ہوئے ہیں۔ مہاراشٹر اور دہلی میں کورونا کے نئے کیسز تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔دوسری جانب کورونا کے اومیکرون کے کیسز بھی بڑھ رہے ہیں۔ ملک میں اب تک اومیکرون کے 781 کیسز رجسٹرڈ ہو چکے ہیں جبکہ 241 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔مرکزی وزارت صحت کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد نئے مریضوں سے کم رہی ہے جس کی وجہ سے ایکٹو کیسز میں اضافہ ہوا ہے۔ اس وقت ہندوستان میں 77,002 مریض زیر علاج ہیں۔ جبکہ اس وقت صحت یابی کی شرح 98.40 فیصد ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں میں 7347 مریض صحت یاب ہوئے ہیں جبکہ اب تک کل 34251292 افراد کورونا سے صحت یاب ہوچکے ہیں
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

ملک میں کورونا کے اومیکرون ویرینٹ سے متاثرہ افراد کی تعداد 900 سے تجاوز کر گئی

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق ممبئی، دہلی اور گجرات میں بدھ کو کووِڈ 19 کے نئے کیسز میں زبردست اضافہ ریکارڈ کیا گیا، جب کہ پنجاب میں اومیکرون کا پہلا کیس سامنے آیا، جب کہ ملک بھر میں وائرس کی اس نئی شکل سے متاثرہ افراد کی کل تعداد 900 سے تجاوز کر گئی۔ ہے مرکز اور ریاستوں کے اعداد و شمار کے مطابق، ملک میں کووڈ-19 کے کیسز کی کل تعداد ایک ماہ سے کچھ زیادہ عرصے کے بعد 10,000 سے تجاوز کر گئی ہے۔ 26 نومبر کو کووڈ-19 کے کل 10,549 مریض پائے گئے۔

○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

ملک کے تمام بڑے ادارے پی ایم کے دوستوں کو بیچ دیئے گئے ہیں: پرینکا گاندھی واڈرا

واضح ہو کہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے بدھ کے روز ملک کے مختلف اداروں اور اکائیوں کو نجی ہاتھوں میں دینے کو ریزرویشن کو ختم کرنے کی چال قرار دیا اور کہا کہ اس سے ملک کو کوئی فائدہ نہیں ہو سکتا۔فیروز آباد میں ‘میں ایک لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں’ پاور ڈائیلاگ کے دوران پرینکا نے کہا، ‘ جتنے بڑے ادارے موجود ہیں وہ وزیر اعظم کے دوستوں کو بیچ دیے گئے ہیں۔ اس کا مطلب سمجھئے آج آپ کو سرکاری اداروں میں ریزرویشن ملتا ہے۔ کیا آپ کو پرائیویٹ جاب ملنے پر ریزرویشن ملے گا؟ یہ بھی ریزرویشن ختم کرنے کا ایک طریقہ ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ یہ ملک کے لیے اچھا نہیں ہے کیونکہ زیادہ سے زیادہ روزگار ان اداروں سے آتا ہے۔ یہ صرف ووٹ حاصل کرنے کا نعرہ نہیں ہے۔ اس الیکشن میں اگر آپ کانگریس پارٹی کو بااختیار بناتے ہیں تو آپ دیکھیں گے کہ خواتین بااختیار ہوں گی۔خواتین کو اپنی طاقت کو پہچاننے کی ہدایت دیتے ہوئے پرینکا نے کہا کہ ملک کے ہر گھر میں خواتین ہیں۔ اگر وہ متحد ہو کر یہ فیصلہ کر لیں کہ وہ اپنا ملک بدل دے گی اور اپنی سیاست بھی بدل دے گی تو یقیناً بڑی تبدیلی آئے گی۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

احمد آباد سب سے سستا، ممبئی سب سے مہنگی ہاؤسنگ مارکیٹ: رپورٹ

واضح ہو کہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق کل آمدنی کے قابل ادائیگی ماہانہ اقساط کے تناسب کی بنیاد پر، احمد آباد ملک کے آٹھ بڑے شہروں میں سب سے سستا یا سستی ہاؤسنگ مارکیٹ ہے، جب کہ ممبئی سب سے مہنگا شہر ہے۔ افورڈ ایبل ہاؤسنگ انڈیکس رپورٹ-2021، جو بدھ کو نائٹ فرینک کی طرف سے جاری کی گئی ہے، میں کہا گیا ہے کہ سستی رہائش کے معاملے میں ہندوستانی مارکیٹ دہائی کی بہترین پوزیشن میں ہے۔ سال 2021 میں مکانات کی قیمتوں میں کمی اور ہوم لون پر کم شرح سود کی وجہ سے مکانات سے وابستہ معیشت میں اضافہ ہوا ہے۔ یہ انڈیکس بتاتا ہے کہ شہر میں رہنے والے خاندان کی آمدنی کے تناسب سے ماہانہ قسط کے طور پر کتنی رقم ادا کرنی ہوگی۔ مثال کے طور پر، یہ تناسب 40 فیصد ہونے کا مطلب ہے کہ اس شہر میں ایک خاندان کو اپنی آمدنی کا 40 فیصد ماہانہ قسط کے طور پر ادا کرنا پڑتا ہے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○


مدھیہ پردیش میں یوریا اور بارش کی وجہ سے کسان پریشان، پیاز ایک روپے فی کلو میں بھی خریدنے کو کوئی نہیں ہے تیار

واضح ہو کہ نیوز ادارہ این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مدھیہ پردیش میں کھاد کی کمی، پیداوار کی کم قیمت اور کسانوں کی طرف سے خریدے گئے اناج کو رکھنے میں مجرمانہ غفلت کی وجہ سے کسان پریشانی میں ہیں کھاد کی کمی بوائی کے آغاز سے دسمبر کے آخر تک برقرار رہتی ہے۔ دہلی میں حکومت چل رہی ہے اور بیان کچھ اور دے رہی ہے، اسمبلی میں کچھ اور بتا رہی ہے۔ دوسری طرف ودیشا میں کھلے میں رکھا دھان بھیگ گیا اور مندسور میں بے موسم بارش نے پیاز کے کسانوں کو تباہ کر دیا ہے۔ کسانوں کی زرعی پیداوار کی منڈی میں رکھی پیاز کی فصل بھیگ گئی، جس کی وجہ سے کوئی ایک پیسہ بھی خریدنے کو تیار نہیں ہے۔آگر مالوا ضلع کے سویت کلاں کے کسان یوریا کے لیے پریشان ہو رہے ہیں۔ دکان پر صبح سے ہی لائنیں لگی ہوئی ہیں۔ پولیس کی موجودگی میں کھاد تقسیم کی جارہی ہے۔ فصل بوئی گئی ہے لیکن کھاد کی کمی ہے۔ خواتین اور بچوں کو بھی لائن میں کھڑا ہونا پڑتا ہے۔ دوسری طرف مندسور کے بازار میں غیر موسمی بارش نے پیاز کو تباہ کر دیا ہے۔ پیاز جو آپ 20-25 روپے میں خریدتے ہیں۔ ان کسانوں کو صرف 50 پیسے فی کلو سے ₹ 1 فی کلو مل رہے ہیں ۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

دہلی میں یلو الرٹ ہے احتجاج نہیں کر سکتے دہلی پولیس کی احتجاجی ڈاکٹروں سے اپیل

واضح ہو کہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق دہلی میں احتجاج کرنے والے ریزیڈنٹ ڈاکٹروں اور پولیس کے درمیان کشیدگی ہے۔ دہلی پولیس نے بدھ کو کووڈ پابندیوں کا حوالہ دیتے ہوئے ان سے احتجاج واپس لینے کا مطالبہ کیا۔ دہلی پولیس کے اے سی پی بی ایس یادو نے کہا کہ ڈاکٹر دہلی میں اپنا احتجاج جاری نہیں رکھ سکتے کیونکہ یہاں یلو الرٹ جاری کیا گیا ہے یادو نے کہا کہ ‘ہم نے ڈاکٹروں سے کہا ہے کہ وہ ہڑتال جاری نہیں رکھ سکتے۔ دہلی میں کووڈ کو لے کر یلو الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ ڈی ڈی ایم اے ایکٹ کے تحت بھیڑ جمع نہیں ہو سکتی۔ ہم نے ڈاکٹروں سے کورونا کی وجہ سے ہڑتال ختم کرنے کی درخواست کی ہے۔ تاہم احتجاج پر بیٹھے ڈاکٹروں کی تنظیم نے کہا ہے کہ ان کی ہڑتال بدستور جاری ہے۔ FORDA (فیڈریشن آف ریذیڈنٹ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن) کے صدر ڈاکٹر منیش نے کہا کہ ‘ہمیں دہلی پولیس نے یلو الرٹ کا حوالہ دیا ہے۔ ہماری ہڑتال اب بھی جاری ہے۔ ہم دہلی پولیس سے تحریری معافی مانگنے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ ہم ایک میٹنگ کریں گے اور فیصلہ کریں گے کہ ہڑتال جاری رکھی جائے یا ختم کی جائے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

دہلی کے بعد اب یوپی میں بھی کورونا کی نئی گائیڈ لائن جار5

واضح ہو کہ کورونا کے بڑھتے ہوئے کیس کے بعد ریاست کی یوگی حکومت نے وبائی امراض کے قانون کو لاگو کرنے کے ساتھ ساتھ پابندیوں کی نئی گائیڈ لائن جاری کی ہے۔ اس کے مطابق رات کے کرفیو کے دوران ضروری خدمات اور سامان کی گاڑیوں بشمول ایمبولینس وغیرہ کی نقل و حرکت کی اجازت ہے۔ اس کے ساتھ کووڈ-19 سے وابستہ پولیس اہلکاروں اور رات کی صنعتوں سے وابستہ کارکنوں کو ان کی شناخت کی بنیاد پر نقل و حرکت کی اجازت ہوگی۔ پولیس افسران کو ماسک پہننے اور سماجی دوری کو سختی سے نافذ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے اس کے علاوہ بند جگہوں پر شادی کی تقریب اور دیگر پروگراموں میں 200 سے زائد افراد کو اکٹھا یا مدعو نہیں کیا جا سکتا اور تمام لوگوں کے لیے ماسک پہننا ضروری ہے۔ 2 گز کا فاصلہ۔ کھلی جگہوں پر، مہمانوں کو گنجائش کے %50 تک مدعو کیا جا سکتا ہے۔ یہاں سینیٹائزر، 2 گز اور ماسک کے اصولوں پر بھی عمل کرنا ہوگا۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

بی جے پی کے ریاستی صدر کا وعدہ آپ ہمیں ووٹ دیں ہم آپ کو 50 روپے میں شراب کی بوتل دیں گے

واضح ہو کہ آندھرا پردیش بی جے پی کے صدر سومو ویرراجو نے ریاست کے لوگوں سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو ووٹ دینے کی اپیل کرتے ہوئے ایک عجیب وعدہ کیا ہے۔ منگل کو وجئے واڑہ میں ایک پروگرام کے دوران انہوں نے کہا کہ ایک کروڑ ووٹ بھارتیہ جنتا پارٹی کو دیں۔ ہم صرف 70 روپے میں شراب فراہم کریں گے۔ اگر ہمارے پاس مزید آمدنی باقی ہے تو ہم صرف 50 روپے میں شراب فراہم کریں گے۔ بہار میں جہاں بی جے پی کی اتحادی نتیش حکومت شراب بندی کو لے کر بحث میں رہتی ہے وہیں آندھرا پردیش کے بی جے پی لیڈر نے شراب کو لے کر ایسا بیان دیا ہے جس کے بعد بی جے پی کی مشکلات بڑھ سکتی ہیں۔ آندھرا پردیش بی جے پی کے صدر سومو ویرراجو نے ووٹروں سے بی جے پی کو ووٹ دینے کی اپیل کی ہے وجئے واڑہ میں منعقد ایک پروگرام کے دوران انہوں نے کہا کہ اگر آپ بی جے پی کو ووٹ دے کر جیت جاتے ہیں تو ریاست میں شراب بہت سستی ہو جائے گی۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

جھارکھنڈ حکومت تمام موٹر سائیکل راشن کارڈ ہولڈروں کو 25 روپے تک پٹرول سبسڈی دے گی: ہیمنت سورین

واضح ہو کہ جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین نے حکومت کے 2 سال مکمل ہونے پر بڑا اعلان کیا ہے درحقیقت سی ایم ہیمنت سورین نے ریاست کے راشن کارڈ ہولڈروں کے تمام موٹرسائیکل ڈرائیوروں کو پٹرول پر ماہانہ 250 روپے تک سبسڈی دینے کا اعلان کیا ہے یہ رقم ان کے اکاؤنٹ میں منتقل کر دی جائے گی جس کے بعد لاکھوں لوگوں کو بڑی راحت ملتی دکھائی دے رہی ہے جھارکھنڈ کے سی ایم او نے سی ایم سورین کے ذریعے ٹویٹ کیا ہے جس میں کہا گیا ہے پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں لگاتار اضافہ ہو رہا ہے غریب اور متوسط طبقے کے لوگ اس سے سب سے زیادہ متاثر ہو رہے ہیں اس لیے حکومت نے ریاستی سطح سے موٹرسائیکل متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے پٹرول پر 25 روپے فی لیٹر کی ریلیف دیں اس کا فائدہ 26 جنوری 2022 سے ملنا شروع ہو جائے گا انہوں نے کہا کہ پٹرول ایک غریب شخص کے گھر میں موٹرسائیکل ہونے کے باوجود پیٹرول کے پیسے نہ ہونے کی وجہ سے اسے چلانے کے قابل نہیں ہے ، اپنی فصل بیچنے کے لیے بازار نہیں جا سکتا اس لیے میں نے فیصلہ کیا ہے کہ اگر ایسے راشن کارڈ ہولڈر اپنی موٹرسائیکل یا اسکوٹر میں پٹرول بھرتے ہیں تو 25 روپے فی لیٹر کے حساب سے ہم ان کے بینک اکاؤنٹ میں رقم منتقل کردیں گے ہم 26 جنوری سے اس نظام کو نافذ کرنے جا رہے ہیں اور ایک غریب خاندان یہ رقم ماہانہ 10 لیٹر تک پٹرول حاصل کر سکتا ہے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

اومیکرون کے بڑھتے ہوئے معاملات کے درمیان مغربی بنگال حکومت اسکول کالج بند کرسکتی ہے

واضح ہو کہ مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے بدھ کے روز عہدیداروں سے کہا کہ وہ ریاست میں وبائی صورتحال کا جائزہ لیں کیونکہ انتہائی متعدی اومیکرون قسم کی وجہ سے کووڈ-19 کے معاملات میں اضافہ ہوا ہے انہوں نے یہ بھی کہا کہ ضرورت پڑنے پر اسکول اور کالج کچھ وقت کے لیے بند کیے جا سکتے ہیں چیف منسٹر نے جنوبی 24 پرگنہ کے گنگا ساگر میں ایک انتظامی جائزہ میٹنگ کی جہاں انہوں نے کہا کہ کولکتہ آنے والی بین الاقوامی پروازوں پر فیصلہ لینے کی ضرورت ہے انہوں نے کہا ابھی تک ہم گنگا ساگر میلے کی وجہ سے ٹرینوں کی تعداد کم نہیں کر رہے ہیں بنرجی نے حکام کو کولکتہ میں کنٹینمنٹ زونز کی نشاندہی شروع کرنے کی بھی ہدایت دی کیونکہ وہاں کووڈ کیسز کی تعداد بڑھ رہی ہے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

یوگی حکومت نے اترپردیش کو کورونا متاثرہ ریاست قرار دیا

واضح ہوکہ فروری میں کورونا کی ممکنہ تیسری لہر کے درمیان کورونا ایک بار پھر اتر پردیش میں بڑھ رہا ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 80 نئے مریض ملنے کے بعد ریاست میں فعال مریضوں کی تعداد 392 ہو گئی ہے۔ ادھر یوپی حکومت نے یوپی کو کورونا سے متاثرہ ریاست قرار دیا ہے۔ ایڈیشنل چیف سکریٹری صحت امیت موہن پرساد نے کہا کہ گورنر نے یوپی پبلک ہیلتھ اینڈ ایپیڈیمک ڈیزیز کنٹرول ایکٹ 2020 کے سیکشن 3 کے تحت اس سلسلے میں ایک خط جاری کیا ہے۔ یہ اعلان 31 مارچ تک نافذ العمل رہے گا۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

یوپی کے 46 اضلاع میں دوبارہ پھیلا کورونا، نوئیڈا سمیت ان شہروں میں سب سے زیادہ کیس ہوئے رپورٹ

واضح ہوکہ اتر پردیش میں ایک بار پھر کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے۔ ریاست کے 46 اضلاع میں ایک بار پھر کورونا کیسز سامنے آنے لگے ہیں۔ حالانکہ 29 اضلاع میں کورونا کا ایک بھی کیس نہیں ہے۔ منگل کو ریاست میں 80 نئے کیس رپورٹ ہوئے۔ یہ تعداد پیر کے مقابلے دوگنی تھی۔ پیر کو ریاست میں 40 متاثرہ پائے گئے۔ سب سے زیادہ 28 مریض نوئیڈا میں پائے گئے۔ اس کے ساتھ ہی غازی آباد میں 12، لکھنؤ میں 11، آگرہ میں 5، میرٹھ اور متھرا میں 3-3 معاملے سامنے آئے ہیں۔ اس دوران 11 مریض صحت یاب بھی ہوئے ہیں، دوسری طرف مراد آباد میں 8 کوویڈ پازیٹو پائے گئے ہیں۔ یہاں پہلے ہی 2 کیسز تھے۔ اب یہاں ایکٹو کیسز کی تعداد 10 ہو گئی ہے۔ اس وقت ایکٹو کیسز کی تعداد 392 ہے۔○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

مہاراشٹر اسمبلی کے 5 روزہ سرمائی اجلاس میں کوویڈ کے 50 کیسز، دو وزراء بھی متاثر

واضح ہوکہ مہاراشٹر قانون ساز اسمبلی کا سرمائی اجلاس کورونا وائرس کی لپیٹ میں آگیا ہے۔ دو وزراء سمیت تقریباً 50 افراد کوویڈ-19 مثبت پائے گئے ہیں۔ریاست کے نائب وزیر اعلیٰ اجیت پوار نے کہا، ’’پانچ روزہ اجلاس کے دوران دو وزراء سمیت تقریباً 50 لوگ کوویڈ پازیٹیو پائے گئے ہیں۔اسکولی تعلیم کی وزیر ورشا گائیکواڑ، جو گزشتہ سال کوویڈ سے متاثر ہوئی تھیں، دوبارہ کوویڈ-19 مثبت پائی گئی ہیں۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

اومیکرون کے خطرے کے درمیان ضرورت پڑنے پر بی جے پی ورچوئل ریلیاں کر سکتی ہے: الیکشن انچارج
واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق اومیکرون کے کورونا کے نئے ویرینٹ پر تشویش کے درمیان، بی جے پی کے پنجاب الیکشن انچارج گجیندر سنگھ شیخاوت نے کہا ہے کہ اگر سخت پابندیوں کی ضرورت پڑی تو پارٹی ورچوئل ریلی کا انعقاد کر سکتی ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ اومیکرون کے خوف کے درمیان کئی ریاستوں نے حال ہی میں رات کے کرفیو کے نفاذ کا اعلان کیا ہے۔ ایسے وقت میں جب یوپی اور پنجاب سمیت پانچ ریاستوں میں چند مہینوں میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں، انتخابی ریلیوں میں سماجی دوری کی خلاف ورزی کورونا کے معاملات میں اضافہ کا باعث بن سکتی ہے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

شہروں کے بعد اب بدلے ادیبوں کے نام، اکبرالہ آبادی کا نام بدل کر اکبر پریاگ راجی کیا، محکمہ تعلیم نے کیا ویب سائٹ ہیک ہونے کا دعویٰ

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق اترپردیش کی یوگی حکومت کے ذریعہ شہروں کے نام تبدیل کئے جانے کی ضمن میں الہ آباد کا نام پریاگ راج کردیا گیا تھا۔ اسی درمیان ریاست کی ہائر ایجوکیشن سروس کمیشن نے اپنی آفیشیل ویب سائٹ پر مشہور شاعر اکبر کے نام کے ساتھ جڑے الہ آبادی لفظ کو پریاگ راجی کر دیا ہے۔ ساتھ ہی تیغ الہ آبادی کا بھی نیا نام تیغ پریاگ راج اور راشد الہ آبادی کو راشد پریاگ راجی کردیا گیا۔ اس پورے معاملے کو لے کر جب کافی ہنگامہ ہوا تو محمکہ تعلیم نے اس سے متعلق وضاحت پیش کی۔دراصل، یہ معاملہ صرف اکبر الہ آبادی تک ہی محدود نہیں رہا بلکہ تیغ الہ آبادی اور راشد الہ آبادی جیسے شعرا کے نام بھی بدلے جاچکے ہیں۔ وہیں کمیشن نے شعرا کے نام کے آگے لگے تخلص (ٹائٹل) کو بدلنے کے لئے اباوٹ الہ آباد والے کالم میں پریاگ راجی کر دیا ہے۔ اس کی تنقید شروع ہونے کے بعد ہائر ایجوکیشن سروس کمیشن کے چیئرمین ایشور شرن وشو کرما نے پورے معاملے سے خود کو انجان بتایا ہے۔ حالانکہ اس پیج پر پریاگ راجی سے جڑی تمام بڑی سیاسی ادبی شخصیات کا ذکر کیا ہے۔ وہیں نہرو کے علاوہ مہادیوی ورما، سمترا نندن پنت، نرالا اور بچن کے نام بھی یہاں لکھے گئے ہیں۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

مسلمانوں کے بعد اب ہندوتوا بریگیڈ کا نیا نشانہ بنے عیسائی: مشنریز آف چیریٹی کو لیکر بولے چدمبرم

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے بدھ کو الزام لگایا کہ مسلمانوں کے بعد اب ہندوتوا بریگیڈ کا نیا نشانہ عیسائی ہیں۔ انہوں نے یہ بات مشنریز آف چیریٹی کے ایف سی آر اے رجسٹریشن کی تجدید سے حکومت کے انکار کا حوالہ دیتے ہوئے کہی۔ گووا کے لیے کانگریس کے سینئر انتخابی مبصر چدمبرم نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ مرکزی دھارے کے میڈیا نے مشنریز آف چیریٹی (MOC) سے متعلق وزارت داخلہ کی کارروائی کی خبروں کو اپنے صفحات سے ہٹا دیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ "افسوسناک اور شرمناک” ہے۔

○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

کیرالہ میں 2,846 نئے کیسز، اڈیشہ میں دو مریضوں کی موت

واضح ہوکہ خبر رساں ایجنسی کی کے مطابق، بدھ کو کیرالہ میں کوویڈ-19 کے 2,846 نئے کیسز سامنے آنے کے ساتھ ہی ریاست میں متاثرہ افراد کی کل تعداد بڑھ کر 52,30,249 ہو گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی انفیکشن سے مزید 211 اموات کے بعد مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 47,277 ہو گئی۔ ریاستی محکمہ صحت نے ایک ریلیز جاری کرکے یہ اطلاع دی۔ اس کے ساتھ ہی، اوڈیشہ میں ایک دن میں کورونا وائرس کے 221 نئے کیس رپورٹ ہوئے جبکہ آندھرا پردیش میں 162 نئے کیس رپورٹ ہوئے۔

○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

ممبئی میں نئے کورونا کیسز کی تعداد 2500 سے تجاوز کر گئی، ایک دن پہلے کے مقابلے میں 82 فیصد اضافہ

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق ممبئی میں کورونا کے نئے کیسز کی تعداد میں ‘زبردست اچھال’ نے حکومت کو پریشان کر دیا ہے۔ میٹروپولیٹن ممبئی میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے 2510 نئے کیسز درج ہوئے، یہ تعداد ایک دن پہلے رپورٹ ہونے والے کیسوں کی تعداد سے تقریباً 80 فیصد زیادہ ہے۔ کورونا کیسز میں اس اضافے کے درمیان، ممبئی میں 251 مریض انفیکشن سے صحت یاب ہوئے ہیں۔ اس وقت شہر میں کورونا کے 8060 ایکٹو مریض ہیں۔گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا انفیکشن کی وجہ سے ایک موت ہوئی ہے، ممبئی میں اب تک 16375 لوگ کورونا کی وجہ سے جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ بدھ کو 51843 کورونا ٹیسٹ کیے گئے۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

دہلی میں کورونا کیسز میں بڑا اضافہ، گزشتہ 24 گھنٹوں میں 923 نئے مریض سامنے آئے

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق ملک کی راجدھانی دہلی میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملات میں زبردست اچھال درج کی گئی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں یہاں 923 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ منگل کو 496 نئے مریض پائے گئے۔ 7 ماہ میں پہلی بار ایک دن میں یہ کیسز سامنے آئے ہیں۔ اس سے قبل 29 مئی کو 956 کیس سامنے آئے تھے۔ منگل کے مقابلے میں نئے کیسز میں 86 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ یہاں مثبتیت کی شرح بھی 1% سے تجاوز کر گئی ہے، جو 28 مئی کے بعد سب سے زیادہ ہے۔ 28 مئی کو مثبتیت کی شرح 1.58 فیصد تھی۔ لیکن بہتر بات یہ ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ایک بھی موت واقع نہیں ہوئی۔
○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○○

راجدھانی دہلی میں اب تک Omicron کے 238 معاملے ، 57 افراد  ہوئےصحت یاب

واضح ہوکہ نیوز رپورٹ سے ملی جانکاری کے مطابق دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے دہلی کے لوگوں کو یقین دلاتے ہوئے کہا کہ دہلی حکومت کورونا کو لے کر ہر سطح پر تیار ہے۔ ہمارے پاس آکسیجن، ادویات اور بستر کافی ہیں۔  ہم کورونا کی صورتحال پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں اور ضرورت کے مطابق ہر ممکن اقدامات کرنے کے لیے تیار ہیں۔ اومیکران کے زیادہ تر کیس بیرون ملک سے آنے والے مسافروں میں پائے جاتے ہیں۔ دہلی میں اب تک اومیکران کے 238 معاملے سامنے آئے ہیں۔ ان میں سے 57 افراد صحت یاب ہو کر گھروں کو جا چکے ہیں۔  وزیر صحت ستیندر جین نے کہا کہ ہم نے ویکسینیشن کی صلاحیت میں اضافہ کیا ہے اور ہم روزانہ تین لاکھ تک ٹیکے لگانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ جنوری کے پہلے ہفتے سے بچوں کو ویکسین اور بزرگوں کو بوسٹر ڈوز دینے کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ سب سے اپیل ہے کہ اومیکران سے نہ گھبرائیں لیکن احتیاط کی ضرورت ہے۔ ہر کوئی ماسک پہنیں اور سماجی دوری پر عمل کریں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button