Featuredاہم خبریںعالمی خبریں

متحدہ عرب امارات میں خواتین کو شادی سے پہلے کروانا پڑے گا ایک ٹیسٹ، جانیں وجہ

سی ایچ اے نے کہا کہ سروائیکل کینسر کو آگاہی سے کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ اس کی روک تھام کے لیے سب سے اہم چیز ویکسی نیشن ہے۔

بیداری کے ساتھ کیا جا سکتا ہے کنٹرول

متحدہ عرب امارات میں خواتین سے کہا جا رہا ہے کہ وہ شادی سے پہلے ٹیسٹ کرائیں۔ ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ یہ ان کی حفاظت کے لیے ضروری ہے۔ ابوظہبی کی ہیلتھ سروسز کمپنی SEHA نے کہا کہ خواتین کو شادی سے پہلے ہیومن پیپیلوما وائرس کی ویکسی-نیشن اور ٹیسٹ کرانا چاہیے۔ تاکہ رحم کے کینسر کے خطرے کو روکا جا سکے ۔

یہ بھی پڑھیں

گھر بیٹھے آدھار کارڈ میں اپنا موبائل نمبر یا نام، پتہ تبدیل کریں، جانیں یہ آسان طریقہ

بیداری کے ساتھ کیا جا سکتا ہے کنٹرول

سی ایچ اے نے کہا کہ سروائیکل کینسر کو آگاہی سے کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ اس کی روک تھام کے لیے سب سے اہم چیز ویکسی نیشن ہے۔

سیہا / SEHA نے 13 سے 26 سال کی تمام خواتین سے ویکسین لگوانے کی اپیل کی ہے۔

ویکسی – نیشن اور ابتدائی ٹیسٹ یوٹرن کینسر کو ختم کرنے اور ٹھیک کرنے میں مددگار ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

آدھار کارڈ فرنچائز: مفت میں آدھار سینٹر کی فرنچائز لے کر بڑی رقم کمائیں! یہ ہے طریقہ

متاثرہ خاتون کی کہانی

سیہا ویکسی نیشن کی حوصلہ افزائی کے لیے خواتین کو ایک کہانی بھی سنائی ہے۔

28 سالہ خاتون شادی کے دو سال بعد بھی حاملہ نہ ہو سکی۔ معائنہ کرنے پر پتہ چلا کہ اسے سروائیکل کینسر ہے۔ تاہم علاج کے بعد وہ مکمل طور پر تندرست ہوگئیں۔ متحدہ عرب امارات کے مدینہ خلیفہ ہیلتھ کیئر سینٹر کے ڈاکٹر شاہد فیصل العیالہ نے کہا کہ سروائیکل کینسر کے کیسز میں اگر جلد علاج کر لیا جائے تو اس کا علاج ممکن ہے۔

اس کی علامات کیا ہیں

اس کی اہم علامات میں حیض ختم ہونے کے بعد خون آنا، جماع کے بعد خون آنا، اندام نہانی میں انفیکشن، پیشاب میں جلن، اندام نہانی سے سفید مادہ اور جسم میں درد ہے۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button