نوادا

قرض کے باعث خاندان کے 6 افراد نے جان دے دی، نوادہ میں میاں بیوی اور 4 بچوں نے زہر کھا لیا۔خودکشی نوٹ پڑھیں…….

قرض کی وجہ سے 6 کی موت، : 5 سال تک دوگنا تین گنا سود جمع کیا، قرض بالکل ختم نہیں ہو رہا تھا

نوادہ میں قرض کی وجہ سے ایک ہی خاندان کے 6 افراد نے جان دے دی۔ خودکشی کرنے والے خاندان کے سربراہ کیدار لال گپتا نے خودکشی کرنے سے ایک دن پہلے 2 صفحات پر مشتمل خودکشی نوٹ لکھا تھا۔ موت کے بعد یہ خودکشی نوٹ جمعرات کی صبح روزنامہ بھاسکر کو ملا۔ اس میں خاندان کے سربراہ کیدار لال گپتا نے اپنا مسئلہ بیان کرتے ہوئے سود خوروں کے تشدد کا ذکر کیا ہے۔

دو صفحات کے نوٹ میں قرض دینے والے 6 افراد کے ناموں کا حوالہ دیتے ہوئے انہیں ملک اور معاشرے کی دیمک قرار دیا گیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ ایسے لوگ دیمک کی طرح چاٹ کر پورے ملک کو برباد کر رہے ہیں۔ اس نے قرض کا دوگنا سود جمع کرایا تھا۔ پھر بھی قرضہ نہیں اتارا۔

نیو ایریا محلہ کے کیدار لال گپتا نے بدھ کی رات دیر گئے اپنی بیوی اور 4 بچوں کے ساتھ زہر کھا لیا، جس میں 6 لوگوں کی موت ہو گئی۔ زہر پینے کے بعد سب زمین پر تڑپتے رہے۔ بیٹے نے بتایا کہ ہم نے قرض کی وجہ سے زہر کھا لیا ہے۔ پولیس نے 2 افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔

واقعہ سے ایک دن پہلے لکھا گیا سوسائیڈ نوٹ، ساہوکاروں کے ناموں کا انکشاف

خاندان کے سربراہ کیدار نے یہ خودکشی نوٹ واقعہ سے ایک دن پہلے 8 نومبر کو لکھا ہے۔ کیدار نے نوٹ میں لکھا ہے کہ اس نے کچھ لوگوں سے قرض لیا تھا۔ جس میں چھ مہاجن مسلسل پریشان ہیں۔ اس نے شہر کے نیو ایریا محلہ کے منیش سنگھ، وکاس سنگھ، وجے سنگھ، ٹنتون سنگھ کھتل، ڈاکٹر پنکج سنہا اور گڑھ پار محلہ کے رنجیت سنگھ سے قرض لیا تھا۔

قرض کا دوگنا تین گنا سود جمع کرایا تھا۔

خودکشی نوٹ میں لکھا ہے کہ پانچ چھ سال سے مہاجن اسے قرض کے لیے پریشان کر رہا تھا۔ اس نے قرض کا دوگنا سود جمع کرایا تھا۔ پھر بھی قرضہ نہیں اتارا۔

قرض کی ادائیگی کے لیے کچھ دن کا مطالبہ کر رہے تھے۔

خودکشی نوٹ میں لکھا ہے کہ وہ قرض کی ادائیگی کے لیے ساہوکاروں سے وقت مانگ رہے تھے۔ وہ ایک سال چھ ماہ کا وقت مانگ رہے تھے لیکن قرض دینے والے کچھ سننے اور سمجھنے کو تیار نہیں تھے۔ وہ اسے پچھلے پانچ چھ سالوں سے مسلسل ہراساں کر رہا تھا۔

سود کی عدم ادائیگی کی صورت میں گالیاں دیتے تھے۔ جس کی وجہ سے وہ یہ غلط قدم اٹھانے پر مجبور ہے۔

انہوں نے یہ بھی لکھا کہ قرض دینے والے معاشرے کے کیڑے ہیں، جو معاشرے کو برباد کر رہے ہیں۔ چھ قرض دینے والوں نے بہت سے لوگوں کو مکمل طور پر برباد کر دیا ہے۔ ایسے دیمک کو روکنے کی ضرورت ہے۔

مرنے والوں میں گھر کے سربراہ 50 سالہ کیدار لال گپتا، 47 سالہ بیوی انیتا کماری، بیٹا 16 سالہ شہزادہ، بیٹی شبنم کماری، 20 سالہ بیٹی گوڈیا کماری، 17 سالہ شامل ہیں۔

نوادہ میں قرض کی وجہ سے بدھ کو ایک ہی خاندان کے 5 افراد نے جان دے دی۔ نیو ایریا محلہ کے کیدار لال گپتا نے بدھ کی رات دیر گئے اپنی بیوی اور 4 بچوں کے ساتھ زہر کھا لیا، جس میں 5 لوگوں کی موت ہو گئی۔ جبکہ ایک کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ زہر پینے کے بعد سب زمین پر تڑپتے رہے۔ بیٹے نے بتایا کہ ہم نے قرض کی وجہ سے زہر کھا لیا ہے۔ پولیس نے 2 افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button