بہاربین ریاستی خبریںدہلی

بہار میں ملک کے سب سے بڑے سونے کے ذخائر برآمد، جانیں کون سا شہر بہار کو بنائے گا امیر ؟

نئی دہلی (قومی ترجمان) بہار جسے اکثر غریب ریاست کہا جاتا ہے، اب جلد ہی امیر ہونے والا ہے۔ دراصل ملک کے سب سے بڑے سونے کے ذخائر بہار کے جموئی ضلع کے سونو بلاک کے کرماٹیہ علاقے میں ہیں۔یہ ہم نہیں کہہ رہے ہیں بلکہ مرکزی کانکنی وزیر پرہلاد جوشی نے خود اس کی تصدیق کی ہے۔

پرہلاد جوشی نے انکشاف کیا ہے کہ جموئی کے پاس ملک کا سب سے بڑا سونے کا ذخیرہ ہے۔جموئی ضلع کے سونو علاقے میں صرف 44 فیصد سونا ہے۔ اب ایسی صورتحال میں اس چیز پر مہر لگنے کے بعد اس علاقے کے لوگوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔

اس شاندار خبر کے بعد علاقے کے لوگوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ مقامی لوگوں میں امید ہے کہ اب نہ صرف یہاں کے لوگ بلکہ پورا بہار خوشحال ہوگا۔

اب جلد ہی یہاں سونے کی کان کنی شروع ہو جائے گی۔اس علاقے کے لوگ خوش ہیں کیونکہ ملک کا 44 فیصد سونا کرماٹیہ کے علاقے میں پایا جاتا ہے۔

چرہٹ گاؤں کے سدھاکر کمار سنگھ اور پونیت کمار سنگھ نے بتایا کہ وہ بچپن سے دیکھتے آئے ہیں کہ 8 کلومیٹر کے دائرے میں موجود مٹی میں روشن معدنیات پائے جاتے ہیں جو کہ سونا ہے۔وہیں مہیشوری گاؤں کے دیپک سنگھ نے بتایا کہ کولکتہ کی ٹیم 15 سال پہلے سروے کے لیے یہاں آئی تھی، ٹیم نے سونے کے ساتھ مزید معدنیات حاصل کرنے کی بات کہی تھی ۔اب جب حکومت نے کہا ہے کہ یہاں سونے کا ذخیرہ ہے تو ظاہر ہے کہ کان کنی کی وجہ سے مقامی لوگوں کے لیے روزگار بڑھے گا، ساتھ ہی بہار اور جموئی بھی خوشحال ہوں گا۔

جموئی میں کئی دیگر معدنیات کے ذخائر بھی موجود ہونے کے ہیں قوی امکانات

آپ کو بتاتے چلیں کہ جموئی ضلع کے سونو کے علاوہ دیگر بلاکس میں بھی کئی قسم کی معدنی دھاتیں پائی جاتی ہیں جن میں ابرک کے علاوہ سلیمانی سمیت کئی قیمتی پتھر شامل ہیں۔ ایسے میں بتایا جا رہا ہے کہ 15 سال قبل جیولوجیکل سروے آف انڈیا کے لوگوں کے سروے کے بعد کھدائی مہنگی ہونے کی وجہ سے دوبارہ شروع نہیں ہو سکی۔ لیکن، جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے اب کھدائی پہلے کے مقابلے سستی ہوتی جا رہی ہے، اس لیے اب اس بات کے امکانات ہیں کہ یہاں سونے کی کان کنی جلد شروع ہو سکتی ہے۔

15 سال پہلے کھدائی کی گئی تھی

درحقیقت جموئی ضلع کے سونو بلاک کے چورہیٹ پنچایت کا کرماٹیہ علاقہ کئی دہائیوں سے سونے کے ذخائر کو لے کر بحث میں ہے۔ یہاں کے لوگ بتاتے ہیں کہ بہت پہلے سے یہاں کی مٹی میں سونے کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے ملے تھے۔ بہت پہلے لوگ کرماٹیا کے علاقے کی مٹی کو دریا کے پانی میں دھو کر اسے چھان کر سونا نکالتے تھے۔

جس کی وجہ سے تقریباً 15 سال قبل سرکاری ادارے کے لوگ یہاں آئے اور مہینوں بعد سروے کا کام ہوا۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسی سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ جموئی ضلع کے سونو بلاک کے اس کرماٹیہ علاقے میں ملک کے سب سے بڑے سونے کے ذخائر ہیں، کہا جا رہا ہے کہ یہاں 44 فیصد سونا پایا جا رہا ہے۔

رکن اسمبلی نے سوال کیا تو ہوا اس کا انکشاف

درحقیقت بہار بی جے پی کے صدر اور بیتیا کے ایم پی سنجے جیسوال نے بدھ کو لوک سبھا میں مرکزی کانکنی وزیر پرہلاد جوشی سے بہار کی ریاستوں میں سونے کے ذخائر کے بارے میں سوال کیا تھا۔ اس سوال کے جواب میں جانکاری دیتے ہوئے پرہلاد جوشی نے کہا تھا کہ بہار میں ملک کے سب سے زیادہ سونے کے ذخائر ہیں۔

بتایا گیا کہ ملک میں کل 501.83 ٹن سونے کے بنیادی ذخائر ہیں، جن میں سے 654.74 ٹن سونے کی دھات ہے، جس میں سے 44 فیصد سونا صرف بہار میں پایا گیا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button