اہم خبریںبہاربیگوسراے

بہار کے وزیر تعلیم سے معافی کا مطالبہ، جانیں آخر کیا ہے معاملہ

ہفتہ کو وزیر تعلیم بھنڈاری بابا کے مقام پر منعقد پروگرام میں شرکت کے لیے پہنچے تھے۔

وزیر تعلیم کی عدالت، ڈی ای او، ڈی پی او اور بی ای او زمین پر بیٹھے، ویڈیو وائرل

بیگوسرائے: ،13 فروری (قومی ترجمان) بہار کے وزیر تعلیم وجے کمار چودھری کے خلاف اساتذہ کا غصہ ایک بار پھر عروج پر پہنچ گیا ہے۔ معاملہ بیگوسرائے کے بچھ باڑا کے فاتحہ گاؤں میں منعقد ایک پروگرام سے متعلق ہے۔ ہفتہ کو وزیر تعلیم بھنڈاری بابا کے مقام پر منعقد پروگرام میں شرکت کے لیے پہنچے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

بغیر کسی چیز کو ڈیلیٹ کیے ایسے کریں فون کی سٹوریج کو خالی ؟ جانیں کیا ہے طریقہ

پروگرام میں ڈی ای او، ڈی پی او اور بی ای او کے بیٹھنے کا کوئی انتظام نہیں تھا۔ چنانچہ تمام افسران عام لوگوں کے درمیان زمین پر بچھے ہوئے قالین پر بیٹھ گئے۔ وزیر تعلیم سربراہ اور افسران کی کرسی پر بیٹھنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

عہدیداروں کی اس حالت زار کو دیکھ کر اساتذہ تنظیموں نے وزیر کے اس رویے کی سخت مذمت کی ہے۔

اساتذہ رہنماؤں نے اس پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اساتذہ اپنی محنت سے نوجوانوں کو تعلیم دے کر ملک کا مستقبل سنوارتے ہیں۔ لیکن بیگوسرائے سے جو تصویر سامنے آئی ہے وہ شرمناک ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈی ای او سمیت محکمہ تعلیم کے تمام افسران کو دری پر بٹھا کر ان کی توہین کی گئی اور ان کی توہین کرنا اساتذہ کی توہین کے مترادف ہے۔

یہ بھی پڑھیں

خاندان پرستی پر لالو کا طنز، کہا- اب جس کے پاس بیٹا بیٹی نہیں ہو تو ہم کیا کریں، خدا سب کو اولاد دے

اس کے لیے وزیر تعلیم وجے کمار چودھری کو تمام عہدیداروں سے معافی مانگنی چاہیے ورنہ ٹیچرس یونین احتجاج کرنے پر مجبور ہوگی۔

دراصل وزیر تعلیم ایک نجی پروگرام کے تحت بیگوسرائے پہنچے تھے۔ جہاں بہار حکومت کے وزیر تعلیم وجے چودھری سمیت کچھ لوگ کرسی پر بیٹھے تھے۔ جبکہ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر شرمیلا رائے، ڈی پی او اسٹیبلشمنٹ رویندر ساہو، ڈی پی او سرو شکشا راجکمل، بی ای او نرملا کماری کے بیٹھنے کے لیے کرسیوں کا کوئی انتظام نہ ہونے کی وجہ سے انہیں فرش پر بیٹھنا پڑا۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button