تازہ ترینتعلیم و روزگارسمستی پور

بہار کے ایک اسکول کے ہیڈ ماسٹر کی انوکھی کاوش، اب ‘ہوائی جہاز’ میں پڑھ رہے ہیں یہاں کے طلبہ

لوگوں کا کہنا ہے کہ اس سے بچوں میں تعلیم کے حوالے سے بیداری بڑھے گی۔

اسکول کے ہیڈ ماسٹر نے اپنی جیب سے پیسے خرچ کر کے سکول کی لائبریری کو ہوائی جہاز میں تبدیل کر دیا ہے

بہار کے ایک اسکول کے ہیڈ ماسٹر کی انوکھی کاوش، اب ‘ہوائی جہاز’ میں پڑھ رہے ہیں یہاں کے طلبہ

اس دلکش لائبریری میں 15 سے 20 طلباء اکٹھے بیٹھ کر پڑھ سکتے ہیں۔

اس لائبریری کا نام "شکشا اڑان” رکھا گیا ہے

سمستی پور – سمستی پور کے ایک اسکول کے ہیڈ ماسٹر کی انوکھی کاوش و کوشش کی چاروں طرف سے ستائش ہو رہی ہے۔

دراصل ضلع کے محی الدین نگر بلاک کے تحت شیوئے سنگھ پور گاؤں میں واقع اپ گریڈ شدہ مڈل اسکول کو ہیڈ ماسٹر کی کوششوں سے قومی شناخت ملی ہے۔ اس نے اپنا پیسہ خرچ کر کے سکول کو ہوائی جہاز کی شکل دے دی تاکہ طلباء میں سکول آنے کا جوش بڑھایا جا سکے۔ ان کی کاوشوں کو سلام…

سمستی پور کے محی الدین نگر بلاک کے تحت شیوئے سنگھ پور گاؤں میں واقع اپ گریڈ شدہ مڈل اسکول ان دنوں کافی بحث میں ہے۔سکول کے ہیڈ ماسٹر کی کوششوں سے اس سکول کی لائبریری کو ہوائی جہاز میں تبدیل کر دیا گیا ہے۔

اسکول کے ہیڈ ماسٹر نے اپنی جیب سے پیسے خرچ کر کے سکول کی لائبریری کو ہوائی جہاز میں تبدیل کر دیا ہے۔ اس دلکش لائبریری میں 15 سے 20 طلباء اکٹھے بیٹھ کر پڑھ سکتے ہیں۔

یہ اپ گریڈ شدہ مڈل اسکول پٹوری سب ڈویژن کے محی الدین نگر بلاک کے شیوئے سنگھ پور گاؤں میں واقع ہے جو سمستی پور ضلع ہیڈکوارٹر سے تقریباً 70 کلومیٹر دور ہے۔ ہیڈ ماسٹر کی کوشش سے لائبریری کو ہوائی جہاز کی شکل میں بدل دیا گیا ہے۔

اس لائبریری کا نام "شکشا اڑان” رکھا گیا ہے۔ واضح رہے کہ یہ سرکاری خرچ پر تعمیر نہیں کیا گیا۔ سکول کی ہیڈ ماسٹر میگھن ساہنی نے اپنے ذاتی فنڈز سے بچوں میں تعلیم کا شوق پیدا کرنے کے لیے ہوائی جہاز کی شکل میں لائبریری بنائی ہے۔

مڈل اسکول میں بنائی گئی منفرد لائبریری کا افتتاح محی الدین نگر کے ایم ایل اے راجیش کمار سنگھ نے کیا۔ اسکول کی ہیڈ ماسٹر میگھن ساہنی کا کہنا ہے کہ شکشا ایکسپریس محی الدین نگر کے گاؤں نندنی میں بنائی گئی تھی۔ وہ ٹرین کی شکل میں تھا۔ اس کے بعد ان کے اسکول کے بچوں نے ان سے ہوائی جہاز بنانے کی درخواست کی۔ ان کے کہنے کے مطابق” شکشا اڑان ” بنائی گئی ۔

اسکول کے ہیڈ ماسٹر کے اس انوکھے کام کی چاروں طرف تعریف ہو رہی ہے۔ علاقے کے بچوں سے لے کر بزرگوں تک سب اسے اچھی کاوش بتا رہے ہیں۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ اس سے بچوں میں تعلیم کے حوالے سے بیداری بڑھے گی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button