بہاربین ریاستی خبریںپٹنہ

بہار میں اب امینوں کی من مانی نہیں چلے گی، ای ٹی ایس مشین سے ہوگی زمین کی پیمائش

26 /دسمبر – اب ریاست بہار میں زمین کی پیمائش کا عمل الیکٹرانک ٹوٹل اسٹیشن (ETS) کے ذریعے کیا جائے گا۔ اس کے لیے محکمہ ریونیو اینڈ لینڈ ریفارمز نے 711 ای ٹی ایس مشینیں خریدنے کا حکم دیا ہے۔خریداری کے بعد ہر زمین کی پیمائش اس مشین سے کی جائے گی۔اس سے یہ فائدہ ہو گا کہ کسی بھی زمین کی پیمائش میں کوئی غلطی نہیں ہوگی۔ اس کے ساتھ امین کی غلط پیمائش سے جھگڑنے کے رجحان کو بھی روکا جائے گا۔

شینیں خریدنے کا حق اضلاع کو دے دیا گیا ہے۔ہر ضلع کے لیے رقم مقرر کی گئی ہے۔اس کی خریداری JAM پورٹل کے تحت کی جائے گی۔ ایک مشین کے لیے 6 لاکھ روپے یعنی کل 42 کروڑ 66 لاکھ روپے دیے گئے ہیں۔یہ محکمہ ریونیو اور لینڈ ریفارمز کے کاموں کو شفاف اور جوابدہ بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا۔اس وقت ان مشینوں کی مدد سے زمین کے سروے، گاؤں کی حدود کی تصدیق، ترسیمنا کے تعین اور قسطوں کا کام کیا جا رہا ہے۔ یہ مشین اریل ایجنسی نے فراہم کی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ سروے سے وابستہ امین کو بھی مشین مل جائے گی جس سے لینڈ سروے کے کام میں تیزی آئے گی۔ای ٹی ایس مشین سے نکلنے والی شعاعیں زمین کی پیمائش کریں گی۔اس سے ایک سینٹی میٹر بھی فرق نہیں پڑے گا۔ اس سے پیمائش کا عمل تیز ہوگا اور کسی کو غلطی کی شکایت نہیں ہوگی۔پیمائش کے لیے امین مشین کو سائیڈ پر رکھے گا اور پیمائش کرنے والا پرزم کو میدان کے کنارے پر رکھے گا۔ بٹن دبانے پر مشین شعاعیں خارج کرے گی اور پرزم سے پرزم کا فاصلہ ریکارڈ کرے گی۔ جی پی ایس کا بھی استعمال کیا جائے گا۔ پیمائش کے لیے خاص بات یہ ہے کہ اس میڈیم کے ذریعے بیک وقت 50 پلاٹوں کی پیمائش کی جا سکتی ہے۔

حکومت کا ماننا ہے کہ ریاست میں زیادہ تر مجرمانہ واقعات کا تعلق زمین کے تنازعات سے ہے۔ سب سے پہلے اس کمی کو دور کرنا ضروری ہے۔ وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے حال ہی میں کہا تھا کہ 60 فیصد جرائم ایسے معاملات کی وجہ سے ہوتے ہیں۔ اس لیے محکمہ ان بڑے مسائل کے حل کے لیے اقدامات کر رہا ہے۔ زمین کی پیمائش کا طریقہ تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جو انگریزوں کے دور سے چلا آ رہا ہے۔ اب زریاب سلسلہ کی بجائے الیکٹرانک ٹوٹل اسٹیشن سے زمین کی پیمائش کی جائے گی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button