اہم خبریں

مفت میں PAN CARD کیسے بنائیں ، جانیں اپلائی کرنے کا مکمل طریقہ

اس آرٹیکل میں ہم اس بارے میں بات کریں گے کہ آپ اپنا PAN کارڈ آن لائن کیسے بنا سکتے ہیں؟

  • پین کارڈ بنانے کے لیے ضروری چیزیں
  • مفت پین کارڈ کے لیے درخواست کیسے کریں ۔
  • اپنے PAN اسٹیٹس کو کیسے چیک کریں۔

اگر آپ کے پاس PAN کارڈ نہیں ہے اور آپ اپنا PAN کارڈ بنانا چاہتے ہیں تو آپ اسے اپنے موبائل سے خود سے کر سکتے ہیں۔

آن لائن درخواست دینے کا طریقہ جاننے کے لیے ہمارا مکمل آرٹیکل پڑھیں۔

پین کارڈ بنانے کے لیے ضروری چیزیں کیا ہیں؟

اگر آپ آن لائن پین کارڈ بنانا چاہتے ہیں تو آپ کے آدھار کارڈ میں مکمل تاریخ پیدائش ہونا چاہیے، مثال کے طور پر: (2001-01-01) اور ایک موبائل نمبر لنک بھی ہونا ضروری ہے تاکہ آپ کے آدھار کارڈ کو OTP کے کے ذریعے ویری فائی کیا جا سکے۔اور آپ کی عمر کم سے کم 18 سال ہونا چاہیے تب آپ آن لائن PAN کارڈ کے لیے درخواست کر سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

اگر آپ کو صرف ایک ورچوئل کارڈ کی ضرورت ہے آپ کو ہارڈ کاپی کی ضرورت نہیں ہے تو آپ اسے صرف چند سیکنڈ میں مفت میں اسے ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں اسے اپنے موبائل فون میں رکھ سکتے ہیں یا اس کا عکسی کاپی نکال سکتے ہیں ۔

اور اگر آپ اس کی ہارڈ کاپی چاہتے ہیں تو آپ کو 107 روپے خرچ کرنے ہوں گے۔ ہارڈ کاپی آپ کے پتے پر بھیج دی جائے گی۔

آئیے پہلے سیکھیں اور سمجھیں کہ مفت میں اپلائی کرنے کا طریقہ کیا ہے؟ جس میں آپ کو ہارڈ کاپی نہیں ملے گی۔

اور اگر آپ ہارڈ کاپی چاہتے ہیں تو آپ کو پچاس روپے الگ سے خرچ کرکے پھر سے ری پرنٹ کا آرڈر دینا ہوگا۔

PAN CARD FREE ME KAISE BANAYEN مفت میں PAN CARD کیسے بنائیں

مفت پین کارڈ کے لیے اپلائی کرنے کا طریقہ

انکم ٹیکس انڈیا کے ویب سائٹ پر جائیں۔مفت میں PAN CARD بنانے کے لیے یہاں کلک کریں

گیٹ نیو بٹن پر کلک کریں۔

اوپر والے باکس میں آدھار نمبر درج کریں۔

نیچے والے باکس میں اوپر دکھایا گیا کیپچا کوڈ درج کریں (اگر یہ کیپچا صحیح طور پر سمجھ میں نہیں آتا ہے تو، کیپچا کوڈ کے آگے ایک چھوٹا سا آئیکن ہوگا اس پر کلک کریں اور دوسرا کیپچا کوڈ ظاہر ہو جائے گا) اور آئی کنفرم پر کلک کریں۔

(میں تصدیق کرتا ہوں کہ اس کے آگے ایک چھوٹا سا خانہ ہوگا، اس پر کلک کریں اور صحیح علامت ظاہر ہوجائے گی)
جنریٹ آدھار او ٹی پی پر کلک کریں۔

آدھار کارڈ کے ساتھ لنک موبائل نمبر پر OTP آئے گا اسے درج کریں اور آدھار OTP کی تصدیق کریں اور جاری رکھیں بٹن پر کلک کریں۔

آپ کے آدھار کی تاریخ ہوگی اور آپ کی تمام معلومات آدھار سے لی جائیں گی۔اب آپ کو یہاں تین چیزوں کو کنفرم کرنا ہوگا۔

آپ نے پہلے کبھی پین کارڈ نہیں بنایا۔
اگر پہلے سے بنا ہوا پین کارڈ ضبط کیا جاتا ہے تو دفعہ 272B کے تحت 10,000 روپے کا جرمانہ عائد کیا جائے گا۔
آپ کو انکم ٹیکس رولز 1962 کے تحت آدھار کارڈ کی بنیاد پر پین کارڈ بنانے کی اجازت ہے۔

آئی کنفرم کے آگے ایک چھوٹا سا باکس ہوگا جس پر کلک کرکے تینوں کی تصدیق ہوجائے گی۔

ذیل میں دیے گئے PAN کی درخواست جمع کرانے کے بٹن پر کلک کریں۔ آپ کی PAN درخواست موصول ہو گئی ہے اور آپ کو ایک شناختی نمبر ملے گا۔ اس کا اسکرین شاٹ لیں اور اپنے پاس رکھیں۔ PAN کارڈ کے لیے درخواست دینے کے لیے یہاں کلک کریں۔

یاد رکھیں یہ پانچ چیزیں آپ سے قبول کروایا جا رہا ہے ۔

۔ I Conferm پر کلک کرنے کا مطلب ہے کہ ہم ان پانچ چیزوں کو قبول کرتے ہیں۔ یہ پانچ چیزیں ہیں۔

میرے پاس PAN نمبر نہیں ہے۔
میرا موبائل نمبر آدھار کارڈ سے منسلک ہے۔ (کیونکہ آپ کو OTP سے تصدیق کرنی ہوگی)
آپ کے آدھار کارڈ میں مکمل تاریخ پیدائش لکھی ہوئی ہے یعنی تینوں آدھار کارڈ میں تاریخ، مہینہ اور سال موجود ہیں۔
آپ کو قانونی طور پر بچے کے طور پر شمار نہیں کیا جاتا ہے یعنی آپ کی عمر 18 سال سے کم نہیں ہے۔
میں نے شرائط و ضوابط پڑھ لیے ہیں۔

اپنے پین کی Status کو کیسے چیک کریں؟

اس کے بعد آپ 10 منٹ کے بعد اس ویب ایڈریس پر جا کر اپنے PAN اسٹیٹس کو چیک یا ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں۔
چیک اسٹیٹس / ڈاؤن لوڈ بٹن پر کلک کریں۔
اوپر والے باکس میں آدھار نمبر اور نیچے کیپچا کوڈ درج کریں اور جمع کروائیں بٹن پر کلک کریں۔
آپ کے موبائل نمبر پر ایک OTP بھیجا جائے گا، اسے درج کریں اور جمع کرائیں۔
یہاں آپ کو پین کارڈ ڈاؤن لوڈ کرنے کا اختیار ملے گا، آپ اسے ڈاؤن لوڈ پین بٹن پر کلک کرکے ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں۔

آپ کا PAN کارڈ پی ڈی ایف فارمیٹ میں ڈاؤن لوڈ کیا جائے گا۔ اگر آپ اسے کھولتے ہیں تو یہ آپ سے پاس ورڈ طلب کرے گا۔ آپ کی تاریخ پیدائش وہی ہے جو آپ کا پاس ورڈ ہے۔ اسے درج ذیل درج کریں: اگر آپ کی تاریخ پیدائش 2001-01 ہے۔ اگر یہ 01 ہے تو درج کریں: 01012001 اور اگر یہ 2003-10-10 ہے تو درج کریں: 10102003 اور Submit بٹن پر کلک کریں تو آپ کا پین کارڈ کھل جائے گا، ویب سائٹ دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

آپ اسے محفوظ کرکے اسکرین شاٹ لے سکتے ہیں اور اسے اچھی طرح سے کاٹ کر رکھ بھی سکتے ہیں۔ اگر آپ چاہیں تو اس کا پرنٹ آؤٹ لے سکتے ہیں۔ یہ ہر جگہ کام کرے گا اور آپ ڈیجی لاکر سے ڈیجیٹل پین کارڈ بھی ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں۔

ڈی جی لاکر بھی بہت اچھی چیز ہے.. آپ اس سے دستاویزات ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں جو کہ ہر جگہ ویلڈ بھی ہیں …

یہ بھی پڑھ سکتے

قومی ترجمان کا ٹیلیگرام گروپ جوائن کرنے کے لیے یہاں کلک کریں!

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button