Featuredاہم خبریںبہارپٹنہ

چارہ گھوٹالہ کے سب سے بڑے کیس میں لالو یادو پھر جا سکتے ہیں جیل 15 فروری کو آئے گا فیصلہ

950کروڑ کے مشہور چارہ گھوٹالہ کے ملزم آر جے ڈی سپریمو لالو پرساد فی الحال ضمانت پر ہیں

چارہ گھوٹالہ کے سب سے بڑے کیس میں لالو یادو پھر جا سکتے ہیں جیل 15 فروری کو آئے گا فیصلہ

بہار، 30 جنوری : بہار کے سابق وزیر اعلیٰ اور آر جے ڈی سپریمو لالو پرساد یادو سمیت 110 ملزمان کی مشکلات بڑھ سکتی ہیں۔ کیونکہ چارہ گھوٹالہ کیس سے متعلق ڈورانڈا ٹریژری سے غیر قانونی طور پر نکالے جانے کے معاملے میں بحث مکمل ہو چکی ہے۔ سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اس کیس کا فیصلہ 15 فروری کو سنایا جائے گا۔ بتادیں کہ ڈورانڈا خزانے سے کروڑوں روپے کی غیر قانونی طور نکالی گئی تھی ۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

950 کروڑ کے مشہور چارہ گھوٹالہ کے ملزم آر جے ڈی سپریمو لالو پرساد فی الحال ضمانت پر ہیں۔ چارہ گھوٹالے کے دوران ڈورانڈا خزانے سے 139 کروڑ کی غیر قانونی نکالی گئی تھی۔ اس معاملے میں سی بی آئی کی خصوصی عدالت میں بحث مکمل ہو چکی ہے۔ فیصلہ 15 فروری کو آئے گا۔ سی بی آئی کی خصوصی عدالت میں آخری ملزم ڈاکٹر شیلیش کمار کی طرف سے ہفتہ کو حتمی دلائل مکمل ہو گئے۔

108 ملزمان ٹرائل کا سامنا کر رہے ہیں۔

تاہم لالو پرساد یادو کی جانب سے ان کے وکیل نے عدالت میں بحث کی۔ بتا دیں کہ لالو پرساد یادو، سابق ایم پی جگدیش شرما، ڈاکٹر آر کے رانا، پی اے سی کے اس وقت کے صدر دھرو بھگت، ڈاکٹر کے ایم پرساد، ڈاکٹر گوری شنکر پرساد سمیت 108 ملزمان غیر قانونی رقم نکالنے کے معاملے میں مقدمے کا سامنا کر رہے ہیں۔

37 ملزمان کی ہو چکی ہے فوت

سی بی آئی نے پہلے 170 لوگوں کو ملزم بنایا تھا۔ لالو پرایاد یادو سمیت 147 ملزمان کے خلاف الزامات طے کیے گئے تھے۔ اب تک بہار کے سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جگناتھ مشرا سمیت 37 ملزمان کی سماعت کے دوران ہی موت ہو چکی ہے۔

ان خبروں کو بھی پڑھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button