اہم خبریںبہارجرائم و حادثاتمشرقی چمپارن

موتیہاری میں گھر میں 2 دھماکوں سے کہرام مچ گیا، موقع سے 5 زندہ بم اور زندہ کارتوس برآمد

رپورٹ کے مطابق مجرمانہ سازش کو انجام دینے کے لیے گھر میں رکھے گئے دو بم اچانک پھٹ گئے۔

بہار کے موتیہاری میں مجرمانہ وارداتوں کا سلسلہ جاری ہے اور اسی سلسلے میں آج شہر کے وسط یا اگروا محلے میں دھماکہ سے پورا علاقہ ہل گیا۔

یہ دھماکہ ایک گھر میں ہوا۔

معلومات کے مطابق مجرمانہ واردات کو انجام دینے کے مقصد سے وکاس یادو نامی مجرم نے یہ بم اپنے کرائے کے مکان میں رکھا تھا جو پھٹ گیا اور پورے علاقے میں افراتفری مچ گئی۔

واقعہ کے بعد وکاس یادو گھر چھوڑ کر فرار ہو گیا۔ دھماکے کی اطلاع ملتے ہی سٹی تھانے کی پولیس فوری طور پر موقع پر پہنچ گئی اور وہاں سے پانچ زندہ بم اور دو زندہ کارتوس برآمد کر لیے۔ پولیس نے اب اس معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

واقعہ کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے موتیہاری کے ایس پی ڈاکٹر کمار آشیش اور صدر ڈی ایس پی سمیت بڑی تعداد میں پولس فورس اور ٹیکنیکل سیل ٹیم موقع پر پہنچی اور صورتحال کا جائزہ لیا۔

پولیس نے خاتون اور اسی گھر میں رہنے والے دیگر افراد سے ضروری معلومات اکٹھی کیں جس کے بعد ایس پی نے سٹی تھانے کو معاملے کو جلد از جلد حل کرنے کا حکم دیا ہے۔

واقعہ کے بارے میں موتیہاری کے ایس پی آشیش کمار نے بتایا کہ یہ واقعہ اگروا علاقے میں پیش آیا ہے جہاں ایک شخص کرائے کے مکان میں رہتا تھا اور بم بنانے کا کام کرتا تھا۔ اس دوران دو بم دھماکے ہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘تحقیقات کے دوران پانچ زندہ بم اور دو زندہ کارتوس برآمد ہوئے ہیں، ابتدائی تفتیش سے لگتا ہے کہ کسی واردات کو انجام دینے کی تیاریاں جاری تھیں’۔ جلد ہی یہ معاملہ حل ہو جائے گا۔

معاملہ کچھ بھی ہو لیکن اس واقعہ نے ثابت کر دیا ہے کہ ایک بار پھر مجرموں کی طرف سے موتیہاری میں دہشت پھیلانے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں اور گاندھی کے شہر میں کوئی بھی بڑا واقعہ رونما ہو سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گھر بیٹھے آدھار کارڈ میں اپنا موبائل نمبر یا نام، پتہ تبدیل کریں، جانیں یہ آسان طریقہ

आरबीआई ने पेटीएम पेमेंट्स बैंक को नए खाते खोलने से रोककर झटका दिया।

قومی ترجمان کا ٹیلیگرام گروپ جوائن کرنے کے لیے یہاں کلک کریں!

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button