ارریہارولاورنگ آبادبہارپٹنہمنی پور

منی پور میں جے ڈی یو کا کمال، 6 سیٹوں پر جیت درج کر رقم کی تاریخ، ، تمام سیٹوں پر بی جے پی کے امیدواروں کو ہرایا

منی پور اسمبلی انتخابات کی 60 سیٹوں پر بی جے پی کا اثر تقریباً نصف پر نظر آیا۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس نے کل 5 سیٹیں جیتی ہیں۔ وہیں منی پور قانون ساز اسمبلی میں جے ڈی یو کا کھاتہ بھی کھل گیا ہے۔ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ جے ڈی یو کو منی پور میں کانگریس سے زیادہ سیٹیں ملی ہیں۔ جے ڈی یو کے امیدواروں نے بی جے پی کے امیدواروں کو شکست دے کر ان تمام سیٹوں پر کامیابی حاصل کی ہے۔

جے ڈی یو کے تمام چھ امیدواروں نے بی جے پی امیدواروں کو شکست دی۔

الیکشن کمیشن کے جاری کردہ اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تو جے ڈی یو کے تمام چھ امیدواروں نے بی جے پی امیدواروں کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی ہے۔ اگر ہم اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تو جے ڈی یو اور بی جے پی کے امیدواروں کے درمیان ووٹوں کا فرق بہت کم رہا ہے۔ چار سیٹوں پر جے ڈی یو اور بی جے پی کے امیدواروں کے ووٹوں کا فرق آٹھ سو سے کم رہا ہے۔ ساتھ ہی دیگر دو نشستوں پر دونوں جماعتوں کے ووٹوں کا فرق 1249 اور 3773 رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

بہار میں راشن کارڈ کے لیے آن لائن درخواست شروع، جلدی کریں رجسٹریشن، یہاں جانیں درخواست دینے کا طریقہ

۔Mobile phone میں ہی ڈاؤن لوڈ کریں Digital ووٹر کارڈ (Voter Card) ، ووٹنگ کے ساتھ فوٹو آئی ڈی میں بھی آئے گا کام، ڈاؤن لوڈنگ کا جانیں طریقہ

جے ڈی یو کے جیتنے والے امیدواروں کی فہرست

جے ڈی یو کے ایل ایم کھوٹے نے چورا چند پور سیٹ سے بی جے پی کے امیدوار وی ہونگکھنلیانی کو 624 ووٹوں سے شکست دی۔

جیری بام سیٹ سے جے ڈی یو کے محمد۔ اچاب الدین نے بی جے پی امیدوار نیمکرپم بدھ چندر سنگھ کو 416 ووٹوں سے شکست دی۔

جے ڈی یو کے محمد عبدالناصرو نے لیلونگ سیٹ سے بی جے پی کے وائی انتس خان کو 570 ووٹوں سے شکست دی۔

تھنگمی بند سیٹ سے جے ڈی یو کے کھمچھم جوئی کشن سنگھ نے بی جے پی کے جوتن وائیکھوم کو 3773 ووٹوں سے شکست دی۔

جے ڈی یو کے تھنگجام ارون کمار نے وانگکھی سیٹ سے بی جے پی کے اوکرم ہنری کو 753 ووٹوں سے شکست دی۔

جے ڈی یو بہار میں بی جے پی کے ساتھ اقتدار چلا رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گھر بیٹھے آدھار کارڈ میں اپنا موبائل نمبر یا نام، پتہ تبدیل کریں، جانیں یہ آسان طریقہ

اگر PAN کارڈ کو ADAHAR CARD سے لنک نہیں کیا ہے تو اب کر لیں ، ورنہ لگے گا جرمانہ ، جانیں لنک کرنے کا طریقہ اور لنک کرنے کی آخری تاریخ

آپ کو بتاتے چلیں کہ جے ڈی یو بی جے پی کے ساتھ مل کر بہار میں اقتدار سنبھال رہی ہے۔ اس کے باوجود جے ڈی یو نے منی پور میں الگ الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس سے پہلے بھی جے ڈی یو گجرات میں الگ الیکشن لڑ چکی ہے۔ اس سب کے درمیان بھارتیہ جنتا پارٹی کا منی پور پر غلبہ برقرار ہے۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس اپنے اب تک کے بدترین دور کا سامنا کر رہی ہے۔ منی پور میں کانگریس کی کارکردگی بہت خراب رہی ہے اور اسے صرف پانچ سیٹیں مل رہی ہیں۔ کانگریس نے گزشتہ انتخابات میں 28 سیٹیں حاصل کی تھیں اور اس بار اسے 23 سیٹوں پر شکست کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

قومی ترجمان کا ٹیلیگرام گروپ جوائن کرنے کے لیے یہاں کلک کریں!

سب سے پہلے پڑھیں قومی ترجمان پر اردو خبریں ، اردو میں بریکنگ نیوز ۔ آج کی تازہ خبریں ، لائیو نیوز اپڈیٹ ، پڑھیں سب سے بھروسہ مند اردو نیوز ، قومی ترجمان ڈاٹ کام پر جانیئے اپنی ریاست ملک و بیرون ملک اور بالخصوص بہار، جھارکھنڈ، مشرقی وسطی انٹرٹینمنٹ ، اسپورٹس ، بزنس ، ہیلتھ ، تعلیم و روزگار و جاب سے متعلق تمام تفصیلات سب سے پہلے ۔ قومی ترجمان کو ٹیلیگرام ، فیس بک ، انسٹا گرام، یوٹیوب ، ٹویٹر پر فالو کریں ،شیئر کریں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button