Featuredاہم خبریںبہارپٹنہتازہ ترینقومی خبریں

بہار ملک کی ایسی پہلی ریاست جہاں گھر بیٹھے مل جائے گا زمین کا نقشہ، ادا کرنے ہوں گے صرف 150 روپے، جانیں کیسے ملےگا نقشہ ؟

بہار :8 جنوری (قومی ترجمان) ریاست بہار میں اب ایسے لوگوں کے لیے راحت کی خبر آئی ہے جو گھر بیٹھے زمین کا نقشہ حاصل کرنا چاہتے ہیں۔جنہیں زمین کے نقشوں کے لیے سرکاری دفاتر میں گھنٹوں انتظار کرنا پڑتا ہے۔ جبکہ طویل انتظار کرنے کے بعد بھی انہیں اپنی زمین کا نقشہ نہیں مل پاتا۔


دراصل بہار حکومت ایک اسکیم شروع کرنے والی ہےاس اسکیم کے تحت لوگوں کو گھر بیٹھے زمین کا نقشہ مل جائے گا۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق بہار حکومت کے محکمہ محصولات کی جانب سے جلد ہی ایک ایسا نظام شروع کیا جائے گا جس کے تحت لوگوں کو اپنی زمین کا نقشہ بہت آسانی سے مل جائے گا۔اس سسٹم کے آنے سے سرکاری دفاتر میں گھنٹوں گزارنے والے ہنگامہ آرائیوں کو کافی راحت ملے گی۔



آپ کو بتاتے چلیں کہ گھر پر نقشہ حاصل کرنے کے لیے لوگوں کو کچھ اصولوں پر عمل کرنا ہوگا جس کے بعد محکمہ ریونیو زمین کا نقشہ براہ راست لوگوں کے گھروں کو بھیجے گا۔

بہار میں جلد ہی گھر بیٹھے مل جائے گا زمین کا نقشہ

سب سے پہلے لوگوں کو ڈائریکٹوریٹ آف لینڈ ریکارڈ اور پیری میٹر dlrs.bihar.gov.in کی ویب سائٹ پر جانا ہوگا جہاں انہیں ڈورسٹیپ ڈیلیوری سسٹم کا آپشن ملے گا اس پر کلک کرنا ہوگا ۔ اس کے بعد آن لائن درخواست فارم بھرنا ہوگا۔

فارم میں تمام تفصیلات بھرنے کے بعد 150 روپے بھی آن لائن جمع کرنے ہوں گے۔ درخواست کے چند دنوں بعد نقشہ آپ کے گھر پہنچا دیا جائے گا۔


دراصل بہار میں یہ نظام پچھلے سال جولائی میں ہی شروع ہونا تھا۔ تاہم تکنیکی خرابی کے باعث یہ سروس اب تک شروع نہیں ہو سکا ہے ۔


جانکاری کے مطابق اب تمام پریشانیاں دور کر دی گئی ہیں اور جلد ہی یہ نظام بہار میں شروع کر دیا جائے گا۔اس سے دلالوں پر بھی نکیل کسا جائے گا۔موجودہ دور میں بہت سے لوگ نقشہ جلدی حاصل کرنے کے لیے دلال کا سہارا بھی لیتے ہیں اور کچھ پیسے دے کر نقشہ حاصل کر لیتے ہیں ۔ اب ایسی صورتحال میں نقشہ نکالنے کے نام پر غیر قانونی وصولی بھی بند ہو جائے گی۔

ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق بہار ملک کی پہلی ریاست ہے جہاں آن لائن درخواست دے کر گھر بیٹھے نقشے حاصل کرنے کی سہولت شروع کی جا رہی ہے۔ابھی تک یہ نظام کسی اور ریاست میں شروع نہیں ہوا ہے۔اس انتظام سے لوگوں کے لیے یہ بھی آسان ہو جائے گا کہ وہ نقشے کے مطابق آسانی سے اپنی زمین کی پیمائش کر سکیں گے۔ دوسری جانب اگر نقشہ آسانی سے دستیاب ہو جائے تو زمین کے تنازعات کے معاملات بھی کم ہو سکتے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button